ایران کی جوہری پلانٹ میں دھماکے کی تردید

آخری وقت اشاعت:  پير 28 جنوری 2013 ,‭ 15:04 GMT 20:04 PST

فردو میں واقع جوہری تنصیب

ایران نے غیرملکی میڈیا کی ان رپورٹوں کی تردید کی ہے کہ اس کی یورینیم کی افزودگی کی تنصیب میں دھماکا ہوا ہے۔

ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے (اے ای او آئی) کے نائب سربراہ نے کہا ہے یہ کہ خبر ’مغربی پراپیگنڈا‘ ہے جس کا مقصد آئندہ ہونے والے جوہری مذاکرات پر اثرانداز ہونا ہے۔

اس سے قبل اسرائیلی اور مغربی میڈیا نے خبر دی تھی کہ قُم شہر کے قریب واقع ’فردو‘ کی تنصیب میں دھماکا ہوا ہے جس سے بڑے پیمانے پر نقصان ہوا ہے۔

دریں اثنا روس نے مذاکرات میں تازہ ترین تعطل پر مغرب اور ایران دونوں پر تنقید کی ہے۔ مذاکرات کا آخری دور چھ ماہ پہلے ہوا تھا۔

روسی وزیرِ خارجہ سرگئی لاوروف نے الزام لگایا کہ جانبین ’دو شرارتی بچوں جیسی حرکتیں کر رہے ہیں۔‘ ایران اور مغربی ممالک مقررہ تاریخ کے ایک ماہ بعد بھی مذاکرات کے مقام پر متفق نہیں ہو سکے۔

ایران کے سرکاری خبررساں ادارے ارنا کے مطابق اے ای او آئی کے نائب سربراہ سعید شمس الدین نے کہا کہ فردو میں دھماکے کا پروپیگنڈا جوہری مذاکرات سے قبل ان پر اثرانداز ہونے کی کوشش ہے۔

اِرنا کے مطابق ایرانی پارلیمان کے قومی سلامتی اور خارجہ امور کے سربراہ علاؤالدین بروجردی نے بھی ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے۔

جمعے کے بعد سے کئی مغربی اور اسرائیلی خبررساں اداروں نے ایرانی ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ چند روز قبل فردو تنصیب میں ایک بڑا دھماکا ہوا تھا۔

ایک غیر مصدقہ خبر میں کہا گیا تھا کہ تنصیب کے اندر دو سو کے قریب لوگ پھنس کر رہ گئے ہیں۔

اسرائیلی شہری دفاع کے وزیر آوی دچتر نے اسرائیلی فوجی ریڈیو کو بتایا کہ وہ اس دھماکے کے بارے میں اس کے سوا کچھ نہیں کہہ سکتے جو میڈیا پر نشر ہوا ہے۔

فردو قُم شہر کے قریب ایک پہاڑی کے اندر واقع ہے، اور یہ عرصۂ دراز سے مغرب کے لیے تشویش کا باعث ہے۔

گذشتہ نومبر میں جوہری توانائی کے بین الاقوامی ادارے نے کہا تھا کہ ایران اس تنصیب پر 20 فیصد افزودہ یورنیم کی پیداوار کو دگنا کرنے والا ہے۔

ایران کا کہنا ہے کہ اس کی جوہری سرگرمیاں پرامن مقاصد کے لیے ہیں جب کہ مغرب کو خدشہ ہے کہ ایران جوہری بم بنانا چاہتا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔