ٹیوٹا کار بنانے والی دنیا کی بڑی کمپنی

آخری وقت اشاعت:  پير 28 جنوری 2013 ,‭ 09:05 GMT 14:05 PST

ٹوئٹا نے ایک بار پھر جی ایم کو پیچھے چھوڑ دیا ہے

جاپان کی کار بنانے والی کمپنی ٹیوٹا نےگزشتہ برس کے مقابلے اس برس اچھا بزنس کیا ہے جس کی وجہ سے وہ ایک بار پھر گاڑي بنانے والی دنیا کی سب سے بڑی کمپنی بن گئی ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ اس نے سنہ دو ہزار بارہ میں تقریباً پونے ایک کروڑ گاڑیاں فروخت کیں جو سنہ دو ہزار گيارہ کے مقابلے میں تقریباً بائیس‎ فیصد زیادہ ہے۔

ٹیوٹانےگزشتہ برس ستانے لاکھ کاریں فروخت کیں تو جنرل موٹرز نے بھی ترانوے لاکھ گاڑیاں بیچیں۔

جاپان اور تھائی لینڈ میں سونامی جیسی قدرتی آفات کے سبب سنہ دو ہزار گيارہ میں ٹیوٹا کی پروڈکشن کا عمل متاثر ہوا تھا۔

اس کے بعد ٹیوٹا کمپنی اپنی پوزیشن بحال کرنے میں کوشاں تھی اور امریکی بازار میں وہ ایک بار پھر وہ اپنے قدم جمانے میں کامیاب ہوئی ہے۔

"ٹویٹا کے لیےگزشتہ دو برس کافی مشکلات والے رہے۔ کمپنی کے لیے دوبارہ پہلی پوزیشن حاصل کرنا بہت حوصلہ بخش بات ہوگی اور یہ کمپنی کے شیئر ہولڈرز اور سرمایہ کاروں کے لیے اچھی خبر ہے۔"

آٹو انڈسری کے تجزیہ کار وی ویک ودیا

فراٹس اور سلیوان میں آٹو انڈسری کے تجزیہ کار وی ویک ودیا کا کہنا ہے کہ ٹویٹا کے لیےگزشتہ دو برس کافی مشکلات والے رہے۔ کمپنی کے لیے دوبارہ پہلی پوزیشن حاصل کرنا بہت حوصلہ بخش بات ہوگی اور یہ کمپنی کے شیئر ہولڈرز اور سرمایہ کاروں کے لیے اچھی خبر ہے‘۔

قدرتی آفات کے ساتھ ساتھ جاپانی کرنسی ین کے مضبوط ہونے سے بھی ٹیوٹاکمپنی متاثر ہوئی تھی۔ ین کے مضبوط ہونے سے جہاں بیرونی خریدواروں کے لیے جاپانی اشیاء مہنگی ہوجاتی ہیں وہیں ڈالر سے منافع بھی کم ہوجاتا ہے۔

اس سے ٹیوٹا جیسی کمپنی بہت متاثر ہوتی ہیں جن کا زیادہ تر بازار بیرونی ممالک میں ہے۔ لیکن گزشتہ کچھ دنوں میں امریکی ڈالر کے مقابلے ین کافی کمزور پڑا جس سے کمپنی کو بڑا سہارا ملا ہے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ امریکی ڈالر کے مقابلے میں ین کی کمزوری سے ٹیوٹا کمپنی کو فائدہ پہنچےگا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔