قزاقستان: مسافر طیارہ گر کر تباہ، 21 ہلاک

آخری وقت اشاعت:  منگل 29 جنوری 2013 ,‭ 13:04 GMT 18:04 PST

قزاقستان کی سکیٹ ائیر لائن کے جانب سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق طیارے پر بیس مسافر اور عملے کے ارکان سوار تھے جو تمام ہلاک ہو گئے ہیں

وسطی ایشیا کے ملک قزاستان کے دارالحکومت الماتی کے قریب ایک مسافر طیارہ گر کر تباہ ہو گیا جس میں خدشہ ہے کہ اکیس کے قریب افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

کینیڈا کی طیارہ ساز کمپنی بمبارڈئر کا بنایا ہوا سی آر جے 200 طیارہ شمالی قصبے کوکشتو سے الماتی آ رہا تھا کہ ہوائی اڈے پر اترنے سے پہلے گر کر تبا ہو گیا۔ اطلاعات کے مطابق طیارے کو حادثہ موسم کی خرابی کے باعث پیش آیا۔

قزاقستان کی سکیٹ ائیر لائن کے جانب سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق طیارے پر اکیس مسافر اور عملے کے ارکان سوار تھے جو تمام ہلاک ہو گئے ہیں۔

گزشتہ ماہ قزاق سکیورٹی حکام کو لے کر جانے والا فوجی طیارہ گر کر تباہ ہو گیا تھا جس کے نتیجے میں اس میں سوار ستائیس مسافر ہلاک ہو گئے تھے۔

انٹر فیکس نیوز ایجنسی نے ائیر لائن کی جانب سے ابتدائی اطلاعات کی بنیاد پر بتایا کہ طیارے میں سوار تمام افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

ائیرلائن کی جانب سے ابتدائی معلومات کے مطابق طیارے میں عملے کے چھ افراد سمیت اکیس افراد سوار تھے۔

الماتی کے ڈپٹی میئر مؤولین موکاشف نے حادثے کی جگہ کا دورہ کیا اور کہا کہ طیارہ گہری دھند میں گر کر تباہ ہوا۔

مکاشف نے کہا کہ ’ابتدائی طور پر حادثے کی وجہ خراب موسم ہے کیونکہ طیارے کا ایک حصہ بھی سلامت نہیں ہے جب یہ گرا۔‘

سکیٹ ہوائی کپمنی کا قزاقستان میں شمکینت ہوائی اڈے پر دفتر ہے اور اس کی ملک کے اندرونی علاقوں میں پروازیں جاتی ہیں جبکہ یہ ہوائی کمپنی بعض بین القوامی روٹس پر بھی پروازیں چلاتی ہے۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔