سیٹلائٹ خلاء میں پہنچانے کا تجربہ کامیاب

آخری وقت اشاعت:  بدھ 30 جنوری 2013 ,‭ 12:39 GMT 17:39 PST

اس سے پہلے جنوبی کوریا کے راکٹ تجربے ناکام ہو چکے ہیں

جنوبی کوریا کا کہنا ہے کہ اس کی راکٹ کے ذریعے خلا میں سیٹلائٹ پہنچانے کی تیسری کوشش کامیاب رہی ہے۔

بدھ کو مقامی وقت کے مطابق صبح سات بجے نیرو سپیس سینٹر سے ’کوریا سپیس لانچ وہیکل-1 ‘ کو خلاء میں چھوڑا گیا۔

وزیرِ سائنس لی جو ہو کا کہنا ہے کہ یہ سیٹلائٹ مدار میں پہنچ گیا ہے اور یہ ماحولیات کا ڈیٹا جمع کرے گا۔

دو ہفتے قبل ہی شمالی کوریا نے اپنا سیٹلائٹ مدار میں پہنچانے کے لیے راکٹ کا تجربہ کیا تھا۔

جنوبی کوریا کا 140 ٹن کا یہ راکٹ روس کے ساتھ شراکت میں تیار کیا گیا تھا۔

2009 اور 2010 میں یہ راکٹ تجربے ناکام رہے تھے اور تکنیکی بنیادوں پر اس تجربے کو بھی دو مرتبہ ملتوی کیا گیا۔

افسران کا کہنا ہے کہ بدھ کو ہونے والا یہ تجربہ منصوبے کے مطابق ہوا اور راکٹ نے اپنے ہدف پر جا کر سیٹلائٹ کو مدار میں پہنچا دیا۔

جنوبی کوریا کے سیٹلائٹ پہلے سے خلاء میں موجود ہیں لیکن یہ دوسرے ممالک کے ذریعے خلاء میں پہنچائے گئے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔