سؤر ملا گوشت فراہم کرنے والی کمپنی کی نشاندہی

آخری وقت اشاعت:  پير 4 فروری 2013 ,‭ 21:00 GMT 02:00 PST

اسلامی قانون کے تحت جانوروں کو ہاتھ سے ذبح کرنا لازمی ہے

اس کمپنی کا نام ظاہر کر دیا گیا ہے جس نے برطانیہ کی جیلوں کو ایسا حلال کھانا فراہم کیا تھا جس میں سؤر کا ڈی این اے پایا گیا ہے۔

ایک اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ میک کلوگن کوالٹی فوڈز لمیٹد نے ’قلیل مقدار میں بڑا گوشت فراہم کیا تھا۔‘

شمالی آئرلینڈ کے اس ادارے کا کہنا ہے کہ وہ غذائی معیار پر نظر رکھنے والے ادارے کے ساتھ تعاون کر رہی ہے۔

اس شبے کے بعد کہ حلال گوشت میں گھوڑے کے گوشت کی ملاوٹ ہو سکتی ہے، کمپنی کی پانچ مصنوعات کی جانچ کی گئی تھی۔

غذا فراہم کرنے والی 3663 نامی کمپنی کی ترجمان نے کہا کہ انھیں سؤر کے ڈی این اے کی موجودگی کا سن کر ’صدمہ‘ پہنچا ہے۔

اسلام میں سؤر کا گوشت اور اس کی مصنوعات سختی سے حرام ہیں۔

3663 کی ترجمان نے مزید کہا کہ متاثرہ مصنوعات کو واپس منگوا لیا گیا ہے اور یہ کہ انھیں صرف جیلوں ہی میں فراہم کیا گیا تھا۔

’یہ مصنوعات صرف ایک خوراک بنانے والے ادارے میک کولگن کوالٹی فوڈز کی جانب سے تھیں، اور انھیں کسی دوسرے صارف کو فراہم نہیں کیا گیا۔ اس ادارے کی تمام حلال مصنوعات کو واپس کر دیا گیا ہے۔‘

3663 نے ابتداً کہا تھا کہ ابتدائی ٹیسٹ اس کے بعد کیے گئے جب اس کمپنی کا نام آئرلینڈ کی فوڈ سیفٹی اتھارٹی (ایف ایس اے آئی) کی ایک رپورٹ میں آیا تھا۔ اس سے قبل کچھ برگروں میں گھوڑے کا گوشت پایا گیا تھا۔

"ہمیں اس بات سے سخت مایوسی ہوئی ہے کہ ان مصنوعات میں سؤر کے گوشت کا آثار پائے گئے ہیں۔"

غذا کی فراہمی کا ادارہ

ادارے نے کہا، ’3663 نے وزارتِ انصاف کی درخواست پر حلال گوشت فراہم کرنے والے ادارے اور ایف ایس اے آئی کی رپورٹ میں درج شدہ حلال برگر فراہم کرنے والے ادارے کے درمیان ممکنہ تعلق شناخت کر لیا۔‘

3663 کا کہنا ہے کہ گھوڑے کا گوشت تو نہیں ملا لیکن ’ہمیں اس بات سے سخت مایوسی ہوئی ہے کہ ان مصنوعات میں سؤر کے گوشت کا آثار پائے گئے ہیں۔‘

میک کولگن کے ایک ترجمان نے کہا، ’میک کولگن نے پہلے ہی تیزی سے کام کرتے ہوئے جیلوں کو فراہم کیے جانے والی تمام مصنوعات کو الگ کر لیا ہے، جب کہ اس افسوس ناک واقعے کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔‘

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔