امریکی فوج میں ہم جنس پرست جوڑوں کے لیے مراعات

آخری وقت اشاعت:  منگل 12 فروری 2013 ,‭ 02:38 GMT 07:38 PST

لیون پنیٹا نے امید ظاہر کی کہ ایک ایسا وقت آئے گا کہ قانون عسکری اداروں کے تمام سٹاف ممبران کو بغیر کسی جنسی رویے کی بنیاد پر تفریق کے مراعات دینے کی اجازت دے گا

امریکہ کے وزیرِ دفاع لیون پنیٹا کے مطابق پینٹاگان امریکی فوج میں شامل ہم جنس پرست جوڑوں کو بھی ایک خاندان کو دیے جانے والے کچھ مراعات دے گا۔

ان مراعات میں بچوں کی دیکھ بال، ایک ساتھ ڈیوٹی، ایمرجنسی چھوٹیاں اور ٹرانسپورٹ شامل ہیں۔

لیون پنیٹا کے مطابق صحت اورگھر کے مراعات وفاقی قانون میں تبدیلی کے بغیر نہیں دیے جاسکتے۔

یہ اقدام امریکی کانگریس کی طرف سے دوسال پہلے فوج میں کھلے عام ہم جنس پرستی پر عائد پابندی کو ختم کرنے کے بعد اٹھایا گیا ہے۔

لیون پنیٹا نے کہا کہ انہوں نے تمام فوجی اداروں کو حکم دیا ہے کہ یکم اکتوبر تک ان احکامات پر عمل درآمد کریں۔

انہوں نے کہا کہ’ یہ بنیادی مساوات کا معمالہ ہے کہ ہم وردی میں ان تمام مرد اور خواتین کو ایک جیسے مراعات دیں جو اپنے ملک کی خدمت کرتے ہیں۔‘

" یہ بنیادی مساوات کا معمالہ ہے کہ ہم وردی میں ان تمام مرد اور خواتین کو ایک جیسے مراعات دیں جو اپنے ملک کی خدمت کرتے ہیں"

لیون پنیٹا، امریکی وزیرِ دفاع

انہوں نے مزید کہا کہ’خدمات دینے والوں کا خیال رکھنا اور فوجی خاندانوں کے قربانیوں کی عزت کرنا ہمارے قوم کے دو بنیادی اصول ہیں۔‘

لیون پنیٹا نے کہا کہ باقی کے کچھ مراعات وفاقی قانون کی وجہ سے نہیں دیے جا سکتے کیونکہ وفاقی قانون ہم جنس پرستوں کی شادی کو تسلیم نہیں کرتا۔

تاہم انہوں نے امید ظاہر کی کہ ’ایک ایسا وقت آئے گا کہ قانون عسکری اداروں کے تمام سٹاف ممبران اور ان کے خاندان کو بغیر کسی جنسی رویے کی بنیاد پر تفریق کے مراعات دینے کی اجازت دے گا۔‘

یہ مراعات لینے کے لیے فوجی سٹاف ممبر اور ان کے ساتھی کو ’گھریلو شراکت داری‘ کا عہدنامہ دستخط کرنا ہو گا اوراس خصوصی رشتے کی تائید کرنی ہوگی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔