قطر میں شاعر کی سزا پندرہ سال کر دی گئی

آخری وقت اشاعت:  پير 25 فروری 2013 ,‭ 13:43 GMT 18:43 PST

قطر کی سپریم کورٹ اس مقدمے کا حتمی فیلصہ اگلے تیس دنوں میں سنائے گی

خلیجی ملک قطر میں ایک شاعر کی عمر قید کی سزا میں کمی کرتے ہوئے اسے پندرہ سال کر دیا ہے۔

خیال رہے کہ محمد عجمی نامی شاعر پر مقامی افراد کو حکومت کا تختہ الٹنے پر اکسانے اور حکمرانوں کی تذلیل کرنے کے جرم میں عمر قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

محمد عجمی کے وکیل نے بتایا کہ ان کے مؤکل کی سزا کو پندرہ سال کر دیا گیا ہے۔

قطر کی سپریم کورٹ اس مقدمے کا حتمی فیصلہ اگلے تیس دنوں میں سنائے گی۔

دوسری جانب انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والےگروہوں نے محمد عجمی کی سزا پر تنقید کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ اس مقدے میں خامیاں پائی گئیں اور مقدمے کی سماعت خفیہ طور پر ہوئی۔

واضح رہے کہ محمد عجمی پر یہ مقدمہ سنہ دو ہزار دس میں ان کی ایک نظم کے بعد قائم کیا گیا تھا جس میں انہوں نے قطر کے شیخ حماد بن خلیفہ الثانی پر تنقید کی تھی۔

انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے گروہوں کو یقین ہے کہ قطر کے حکام محمد عجمی کی نظم جس میں انہوں نے خطے میں آمریت طرز حکومت پر تنقید کی تھی کی وجہ ناراض ہیں۔

محمد عجمی کی جنوری سنہ دو ہزار گیارہ میں انٹرنیٹ پر اپ لوڈ ہونے والی نظم میں انہوں نے تیونس میں جاری شورش کی حمایت کی تھی۔

انہوں نے اس نظم میں تمام عرب ممالک کی حکومتوں پر بھی تنقید کی تھی۔

خیال رہے کہ مشرقِ وسطیٰ سے شروع ہونے والی شورش کی لہر کے بعد سے قطر میں آزادی رائے پر سخت پابندی ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔