تھائی لینڈ شدت پسندوں سے مذاکرات پر تیار

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 28 فروری 2013 ,‭ 05:59 GMT 10:59 PST

بی آر این تھائی لینڈ میں سرگرم کئی گروپوں میں سے ایک ہے

تھائی لینڈ کی حکومت نے ایک دہائی طویل تنازعے کے خاتمے کے لیے مسلمان باغیوں کے ساتھ امن مذاکرات کے معاہدے پر دستخط کر دیے ہیں۔

معاہدے پر دستخط ملائیشیا میں بی آر این یعنی نیشنل ریولیشن فرنٹ نے کیے۔

تھائی لینڈ پہلی بار مسلمان شدت پسندوں کے ساتھ امن مذاکرات کر رہا ہے۔

تھائی لینڈ کے جنوب میں واقع مسلم اکثریتی علاقے میں سال دو ہزار چار سے جاری تنازع میں اب تک پانچ ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

ملائیشیا کے وزیراعظم نجیب رزاق اور تھائی لینڈ کے وزیراعظم کے درمیان جمعرات کو کوالالمپور میں ملاقات ہو رہی ہے۔

ملائیشیا بات چیت میں معاونت کر رہا ہے اور توقع ہے کہ فریقین کے درمیان امن مذاکرات کی میزبانی کرے گا۔

حکام کا کہنا ہے کہ معاہدے کی جن دستاویزات پر دستخط کیے گئے ہیں اس سے مذاکرات کا عمل شروع ہو سکے گا۔

نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ تشدد جس میں حالیہ ماہ اضافہ دیکھنے میں آیا، کے خاتمے کے حوالے سے یہ ایک اہم پیش رفت ہے۔

تھائی لینڈ کی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری جنرل پاراڈورن پٹاناتھابتر کا کہنا ہے کہ’بدامنی کے خاتمے کے لیے یہ حکومت کی ایک اور کوشش ہے اور اس کا یہ مطلب نہیں کہ تنازع فوری طور پر ختم ہو جائے گا۔‘

لیکن بی آر این کی جانب سے معاہدے پر دستخط کرنے والے حسن تاب نے نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ’خدا کا شکر ہے ہم مسئلے کے حل کے لیے اپنی بہترین کوشش کریں گے۔ ہم اپنے لوگوں سے کہیں گے کہ وہ مسائل کے حل کے لیے مل کر کام کریں۔‘

تھائی لینڈ کے تین جنوبی صوبے پٹّانی، یالا اور ناراتھیواٹ کو سیام میں ملا لیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ ایک صدی پہلے تھائی لینڈ کا نام سیام ہوا کرتا تھا۔ اس علاقے کی اکثریت آبادی مسلمان ہے جبکہ کہ تھائی لینڈ ملک کی اکثریت بودھ مذہب کی پیروکار ہے۔ مسلمان ان جنوبی صوبوں میں مسلم اکثریتی مسلمان علیحدہ ریاست کے قیام کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔