شامی عوام کی تکلیف ختم کرنے پر اتفاق ہے: کیری

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 2 مارچ 2013 ,‭ 23:33 GMT 04:33 PST

ترکی کے وزیرِ خارجہ نے کہا کہ ان کا بنیادی مقصد ’شام کے معصوم عوام کو تحفظ فراہم کرنا ہے‘

امریکہ کے نئے سیکرٹری خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ امریکہ اور ترکی جو نیٹو کے اتحادی ممالک ہیں کے مابین شام کے معصوم شہریوں کی تکالیف کو ختم کرنے پر اتفاق ہے۔

انہوں نے یہ بات جمعہ کو انقرہ میں ترکی کے وزیرِ خارجہ احمد داوتگلو کے ساتھ پریس کانفرنس میں کہی۔

انہوں نے کہا کہ ’دونوں ممالک سمجھتے ہیں کہ شام کے مسئلے کا سیاسی حل پہلی ترجیح ہے۔ ہم زندگیاں بچانا چاہتے ہیں اور لوگوں کو ایک مسلسل لڑائی میں گھیرا ہوا نہیں دیکھنا چاہتے۔‘

امریکی سیکرٹری خارجہ جان کیری کے پہلے بین الاقوامی دورے میں شام کا مسئلہ مرکزی اہمیت رکھتا ہے۔اپنے پہلے بین الاقوامی سفر میں وہ یورپ اور مشرقِ وسطیٰ کے گیارہ ممالک کا دورہ کریں گے۔

اس موقع پر ترکی کے وزیرِ خارجہ نے کہا کہ ان کا بنیادی مقصد ’شام کے معصوم عوام کو تحفظ فراہم کرنا ہے‘۔

"دونوں ممالک سمجھتے ہیں کہ شام کے مسئلے کا سیاسی حل پہلی ترجیح ہے۔ ہم زندگیاں بچانا چاہتے ہیں اور لوگوں کو ایک مسلسل لڑائی میں گھیرا ہوا نہیں دیکھنا چاہتے"

امریکی سیکرٹری، خارجہ جان کیری

ترکی اور امریکہ شام کے صدر بشارالاسد کے مخالف ہیں لیکن دونوں ممالک کے درمیان اس پر اختلاف ہے کہ شامی اپوزیشن کی کس طرح سے حمایت کی جائے۔

امریکی وزیرِ خارجہ کا دورہ ترکی کے وزیر اعظم کے صیہونیت کے خلاف بیان کی وجہ سے متاثر ہوا۔

ترکی کے وزیر اعظم رجب طیب اردوگان نے کہا تھا کہ صیہونیت انسانیت کے خلاف ہے۔ اس بیان کو امریکی سیکرٹری خارجہ نے جمعہ کو ’قابلِ اعتراض!‘ قرار دیا تھا۔

شام کے مسئلے پر جمعہ کو اقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے کہا کہ ’وہ شام میں جاری تشدد سے عوام کی تکلیف کی وجہ سے ذاتی طور پر رنجیدہ ہیں۔‘

انہوں نے کہا کہ شامی حکومت اور حزبِ اختلاف کے پاس بات چیت کرنے کا بہت چھوٹا سا موقع ہے۔ انہوں نے اس بات کا اعتراف کر لیا کہ اقوامِ متحدہ سیاسی طور پر کچھ زیادہ نہیں کر سکتا۔

انہوں نے کہا کہ ان کے خیال میں موجودہ صورتِ حال کو دیکھتے ہوئے شام میں امدادی کارروائیوں کو بڑھانا چاہیے لیکن یہ ’تقریباً نا ممکن‘ ہے کیونکہ امدادی ادارے لوگوں کی ضروریات پوری نہیں کر سکتے۔

واضح رہے کہ امریکہ نے شام کی اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد شامی قومی کونسل کے لیے ساٹھ ملین ڈالر کی اضافی امداد کا اعلان کیا تھا۔

اس بات کا اعلان امریکہ کے نئے وزیر خارجہ جان کیری نے جمعرات کو روم میں شامی حکومت کے حزبِ مخالف رہنماؤں سے ملاقات کے بعد کیا تھا۔

اس وقت امریکی وزیرِ خِارجہ کا کہنا تھا کہ شامی حکومت کے مخالفین کے لیے اضافی امداد کا فیصلہ شامی صدر بشارالاسد کی حکومت پر دباؤ بڑھانا ہے۔

روس جو شام کے صدر بشارالاسد کا قریبی اتحادی ہے نے اس امداد پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اس سے مذاکرات کے ذریعے مسئلے کو حل کرنے کے بجائے تشدد میں اضافہ ہوگا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔