ملائیشیا:جھڑپ میں پانچ پولیس اہلکار ہلاک

آخری وقت اشاعت:  اتوار 3 مارچ 2013 ,‭ 07:43 GMT 12:43 PST

صباح صوبے میں ایک پولیس اہلکار ایک گاڑی کو چیک کر رہا ہے

ملائیشیا میں حکام نے کہا ہے کہ ملک کے مشرق میں واقع صوبے صباح میں نامعلوم جنگجوؤں کے ساتھ مسلح جھڑپ میں کم از کم پانچ پولیس اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔

حکام کے مطابق وہ اس بات کی چھان بین کر رہے ہیں کہ آیا اس واقعے کا تعلق فلپائن سے آئے ہوئے مسلح افراد سے تو نہیں۔

گذشتہ ماہ کم از کم ایک سو فلپائنی کشتی کے ذریعے صباح میں اترے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ ان کے پاس 19ویں صدی کی ایسی دستاویزات ہیں جن سے ثابت ہوتا ہے کہ یہ صوبہ ان کی ملکیت ہے۔

یہ گروہ اپنے آپ کو سولو کی شاہی فوج قرار دیتا ہے، اور اس نے لہد داتو گاؤں پر فروری کے اوائل سے قبضہ کر رکھا ہے۔

جمعے کے روز ایک جھڑپ میں 12 فلپائنی اور دو ملیشیائی پولیس اہلکار مارے گئے تھے۔

اس سے قبل فلپائن کے صدر بینگنو اکوینو نے اس گروہ سے کہا تھا کہ مزید خون خرابے سے بچنے کے لیے ہتھیار ڈال دیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اس گروہ کو چاہیے کہ وہ ’غیرمشروط طور پر ہتھیار ڈال دے۔‘

اس مسلمان گروہ کا مطالبہ ہے کہ وہ صباح صوبے کے جائز حق دار ہیں۔

ملیشیا نے دھمکی دی ہے کہ اگر گروہ نے اپنے آپ کو قانون کے حوالے نہ کیا تو ان کے خلاف ’سخت کارروائی‘ کی جائے گی۔

"ہم چاہتے ہیں کہ وہ فوراً ہتھیار ڈال دیں۔ اگر انھوں نے ایسا نہ کیا تو انھیں سخت کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا۔"

صباح کے پولیس سربراہ حمزہ تائب

صباح کے پولیس سربراہ حمزہ تائب نے خبررساں ادارے اے ایف پی کو بتایا تھا کہ ’ہم چاہتے ہیں کہ وہ فوراً ہتھیار ڈال دیں۔ اگر انھوں نے ایسا نہ کیا تو انھیں سخت کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا۔‘

اس گروہ کی قیادت اگبیمدین کرام کر رہے ہیں جو سولو کے خود ساختہ سلطان جمال الکرام ثالث کے چھوٹے بھائی ہیں۔

19ویں صدی سے قبل سولو سلطنت کئی فلپائی جزائر پر پھیلی ہوئی تھی اور صباح صوبہ اس کا حصہ تھا۔ اس کے بعد اسے انگریزوں نے اپنی عمل داری میں لے لیا تھا۔

صباح 1963 میں ملیشیا کا حصہ بنا تھا۔ ملیشیا اب بھی سولو کی سلطنت کو کرایہ ادا کرتا ہے۔

سولو کی شاہی فوج کا کہنا ہے کہ وہ چاہتے ہیں کہ ملیشیا انھیں صباح صوبے کا جائز حق دار تسلیم کرے، اور لیز کی شرائط پر ازسرِ نو مذاکرات کرے۔

ملیشیا کا کہنا ہے کہ اس کا ایسا کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔