ڈاؤ جونز انڈیکس میں ریکارڈ اضافہ

آخری وقت اشاعت:  منگل 5 مارچ 2013 ,‭ 16:30 GMT 21:30 PST
ڈاؤ جونز

ماہرین کے مطابق اب امریکی معیشت میں سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال ہوتے دکھائی دے رہا ہے

منگل کو نیو یارک کے ڈاؤ جونز انڈیکس میں ریکارڈ اضافہ دیکھا گیا جو کہ عالمی مالیاتی بحران کے بعد سے اب تک سب سے زیادہ مثبت اضافہ ہے۔

وال سٹریٹ کا یہ انڈیکس منگل کو چودہ ہزار دو سو چھبیس پوائنٹس تک چلا گیا جو کہ اکتوبر 2007 میں پچھلے ریکارڈ یعنی چودہ ہزار ایک سو اٹھانوے سے بھی زیادہ ہے۔

اس سے معلوم ہوتا ہے کہ سرمایہ کاروں کا امریکی معیشت میں اعتماد بحال ہو رہا ہے۔ یہ واشنگٹن میں جاری معاشی بحران اور یوروزون سے متعلق خدشات کے باوجود ہے۔

ڈاؤ جونز انڈیکس کی قیمت مارچ دو ہزار نو میں چھ ہزار پانچ سو پچاس پوائنٹس تک جا گری تھی۔ تب سے اب تک یہ دُگنی سے زیادہ ہو گئی ہے۔

ماہرین کے مطابق پچھلے چند ہفتوں میں امریکہ میں پراپرٹی مارکیٹ کے کافی سنبھلنے سے سرمایہ کاروں کا اعمتاد بحال ہوا ہے۔ اس کے علاوہ فروری میں صارفین کا رویہ بھی مثبت رہا۔

یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ اب بڑی کمپنیاں دوبارہ سرمایہ لگانے لگی ہیں اور دوبارہ بھرتیاں کر رہی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ مرکزی بینکوں کا کردار بھی اہم رہا ہے کیونکہ وہ سود کی شرح کو کم رکھنے پر قائم رہے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔