وینزویلا:ہنریک کا انتخاب لڑنے کا اعلان

آخری وقت اشاعت:  پير 11 مارچ 2013 ,‭ 07:23 GMT 12:23 PST
ہنریک کاپرائلز

وینزویلا میں حزب اختلاف کے رہنما ہنریک کاپرائلز نے کہا ہے کہ وہ چودہ اپریل کے صدارتی انتخابات میں حصہ لیں گے۔

ایک ٹی وی خطاب میں انھوں نے برسر اقتدار پی ایس یو وی پارٹی پر الزام لگایا ہے کہ وہ اوگو چاویس کی موت کا فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہی ہے۔

واضح رہے کہ وینزویلا کے صدر اوگو چاویس کی پانچ مارچ کو کینسر جیسے موذی مرض سے دو سال تک لڑنے کے بعد موت ہو گئی تھی۔

ہنریک کاپرائلز ملک کے نائب صدر نکولس مدورو کے خلاف انتخابات میں اتر رہے ہیں۔

نکولس مدورو کو آنجہانی صدر اوگو چاویس نے اپنا پسندیدہ جانشین قرار دیا تھا۔

ہنریک کاپرائلز کے خطاب کے فورا بعد نائب صدر نکولس مدورو ٹی وی پر آئے اور انہوں نے ہنرک پر ’فاسسٹ‘ ہونے کا الزام لگایا۔

"میری جنگ صدر بننے کے لیے نہیں ہے بلکہ وینزویلا کے فروغ کے لیے ہے۔ تم لوگ (پی ایس یو وی) اقتدار کے بھوکے ہو اور اسے کھونے سے خوفزدہ ہو"

ہنریک کاپرائلز

نامہ نگاروں کا کہنا ہے صدارتی انتخابات کی سخت مہم کے لیے سٹیج تیار ہو چکا ہے۔

واضح رہے کہ جمعہ کو حزب اختلاف نے ملک کے نائب صدر نکولس مدورو کی حلف برداری کی تقریب کا بائیکاٹ کیا تھا۔

حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ آئین کے مطابق صدر کی موت کے بعد قومی اسمبلی کے سپیکر کو ملک کے نائب صدر کا عہدہ سنبھالنا چاہیے تھا۔

ہنریک کاپرائلز جو مختلف جماعتوں کے اتحاد ڈیموکریٹک یونیٹی (ایم یو ڈی) کی سربراہی کر رہے ہیں نے اس کارروائی کو پرفریب قرار دیا۔

اتوار کو انہیں نے ایک بار پھر پی ایس یو وی پارٹی پر آئین کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا۔

انھوں نے کہا ’میری جنگ صدر بننے کے لیے نہیں ہے بلکہ وینزویلا کے فروغ کے لیے ہے۔ تم لوگ (پی ایس یو وی) اقتدار کے بھوکے ہو اور اسے کھونے سے خوفزدہ ہو‘۔

انھوں نے مذید کہا ’میں لڑوں گا۔ نکولس میں تمہیں کھلی چھوٹ دینے نہیں دوں گا۔ میں تمہیں ووٹ کے ذریعے ہراؤں گا‘۔

ہنریک کاپرائل 40 سال کے ہیں اور پیشے کے اعتبار سے وہ ایک وکیل اور میرانڈا ریاست کے گورنر ہیں۔ وہ اپنی سیاست کو ’معتدل‘ اور ’انسانی‘ کے طور پر بیان کرتے ہیں۔

خیال رہے کہ اوگو چاویس نے چودہ سال تک وینزیلا پر حکومت کی تھی، انہوں نے آخری انتخابات گذشتہ اکتوبر میں جیتے تھے جس میں انہیں نے 54 فیصد جبکہ ان کے مخالف امیدوار ہنریک کاپرائلز کو 44 فیصد ووٹ ملے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔