برطانیہ: ملالہ یوسفزئی نے سکول جانا شروع کردیا

آخری وقت اشاعت:  منگل 19 مارچ 2013 ,‭ 17:51 GMT 22:51 PST

’میرے خیال میں میری زندگی کا سب سے اچھا دن واپس سکول جانے کا ہے‘

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے علاقے سوات میں طالبان کے حملے میں زخمی ہونے والی ملالہ یوسفزئی نے برطانیہ میں سکول جانا شروع کردیا ہے۔

ملالہ کا ایجبیسٹن ہائی سکول میں پہلا دن تھا اور انہوں نے اس دن کو اپنی زندگی کا اہم ترین دن قرار دیا۔

پچھلے سال اکتوبر میں ملالہ یوسفزئی کو گولی کا نشانہ اس وقت بنایا گیا جو وہ سکول بس میں جا رہی تھیں۔

ان کا علاج برطانیہ کے شہر برمنگھم میں کوئن الزبیتھ ہسپتال میں ہوا تھا۔

ملالہ نے کہا ’میرے خیال میں میری زندگی کا سب سے اچھا دن واپس سکول جانے کا ہے۔ مییرا خواب ہے کہ تمام بچے سکول جاسکیں۔ میں سکول یونیفارم پہن کر فخر محسوس کر رہی ہوں۔‘

ملالہ یوسفزئی نویں جماعت میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ سیاسیات اور قانون پڑھنے میں دلچسپی رکھتی ہیں۔

ایجبیسٹن ہائی سکول کی ہیڈ مسٹریس ڈاکٹر روتھ ویکس نے کہا ’ملالہ دیگر عام لڑکوں کی طرح ہونا چاہتی ہے اور دیگر لڑکیوں کی حمایت چاہتی ہیں۔‘

یاد رہے کہ ملالہ کو گذشتہ سال نو اکتوبر کو طالبان نے سوات کے شہر مینگورہ میں قریب سے گولی کا نشانہ بنایا تھا۔ اس واقعے کے بعد دنیا بھر میں ملالہ کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا گیا تھا۔

ابتدائی علاج کے دوران پاکستانی ڈاکٹروں نے ان کے سر سے گولی نکالی تھی جس کے بعد انہیں علاج کے لیے برطانیہ بھیج دیا گیا تھا۔

پاکستان نے بھی ملالہ یوسفزئی کو ملک کے قومی امن کے اعزاز سے نوازا تھا اور پاکستان کی قومی اسمبلی نے دسمبر 2012 میں ملالہ یوسفزئی کو ’دخترِ پاکستان‘ کا خطاب دینے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی تھی۔

دسمبر دو ہزار بارہ میں انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پر پیرس میں پاکستان اور یونیسکو کے زیرِ اہتمام ہونے والی کانفرنس میں دنیا بھر میں لڑکیوں کی تعلیم کے لیے’ملالہ فنڈ‘ قائم کرنے کا اعلان کیاگیا بھی کیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ ملالہ یوسفزئی کو تمام بچوں کے لیے تعلیم کے حق کے لیے آواز بلند کرنے اور ان کے حوصلے کی وجہ سے آئرلینڈ کا 2012 کا بین الاقوامی ٹپریری ایوارڈ برائے امن بھی دیا گیا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔