پوپ کی پینٹ ہاؤس پر سادہ اپارٹمنٹ کو ترجیح

Image caption پوپ فرانسس ڈومس سانتا مارٹا نامی عمارت کے دو کمروں پر مشتمل اپارٹمنٹ میں مقیم ہیں

رومن کیتھولک عیسائیوں کے نئے مذہبی پیشوا پوپ فرانسس اوّل نے ویٹیکن کے اپوسٹولک محل میں پوپ کی مخصوص رہائش گاہ کی بجائے دو کمروں کے ایک عام اپارٹمنٹ میں قیام کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

پوپ فرانسس اول ایک سادہ منش شخصیت کے طور پر جانے جاتے ہیں۔

ماضی میں بھی جب وہ بیونس آئرس کے آرچ بشپ منتخب ہوئے تھے تو انہوں نے بشپ کے محل میں منتقل ہونے سے انکار کر دیا تھا۔

پوپ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ وہ دیگر پادریوں کے ہمراہ ایک سادہ زندگی گزارنے کا تجربہ کرنا چاہتے ہیں۔

ان کا یہ فیصلہ ایک صدی سے زیادہ پرانی روایت کے برعکس ہے۔ بیسویں صدی کے آغاز میں پوپ پیئس دہم کے دور سے ہر پوپ نے ویٹیکن میں اس ’پینٹ ہاؤس‘ میں قیام کیا ہے جو درجن بھر کمروں، عملے کی رہائش گاہوں پر مشتمل ہے۔

تاہم اپنے انتخاب کے بعد سے پوپ فرانسس سینٹ پیٹرز چرچ کے قریب واقع ڈومس سانتا مارٹا نامی عمارت کے دو کمروں پر مشتمل اپارٹمنٹ میں مقیم ہیں اور وہ ویٹیکن کے ترجمان فریڈریکو لمبارڈی کے مطابق وہ فی الحال وہیں رہنا چاہتے ہیں۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ ’انہوں نے اپنے ساتھی کارڈینلز کو مطلع کر دیا ہے کہ وہ ایک معینہ عرصے تک وہیں قیام کرنا چاہتے ہیں۔‘ تاہم ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ وہ یہ نہیں کہہ سکتے کہ پوپ اس اپارٹمنٹ میں مستقل طور پر قیام کریں گے یا نہیں۔

پوپ کی سرکاری رہائش گاہ میں قیام نہ کرنے کے باوجود پوپ فرانسس سرکاری مہمانوں سے ملاقات کے لیے اسی محل کی لائبریری استعمال کریں گے اور وہ اتوار کو محل کی کھڑکی سے نمودار ہو کر معتقدین سے خطاب بھی کیا کریں گے۔

اسی بارے میں