عراق کار بم دھماکوں میں بیس افراد ہلاک

عراق کے دارالحکومت بغداد اور شمالی شہر کرکوک میں شیعہ مسلک کی مساجد پر ہونے والے کار بم دھماکوں میں کم از کم بیس افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ کار بم دھماکے دارالحکومت بغداد اور کرکوک میں نماز جمعہ کے اوقات میں ہوئے ہیں۔

ملک میں گزشتہ کچھ عرصے سے سنی شدت پسندوں نے کئی حملے کیے ہیں جن میں عام شہریوں اور سرکاری اہلکاروں کو نشانہ بنایا جاتا رہا ہے جن کا مقصد وزیر اعظم نوری المالکی کی حکومت کو غیر مستحکم کرنا ہے جو شیعہ مسلک سے تعلق رکھتے ہیں۔

دس سال پہلے کے مقابلے میں عراق میں پرتشدد واقعات میں کمی آئی ہے تاہم اب بھی سنی شدت پسندوں کے حملوں کا سلسلہ جاری ہے اور ان میں ہر ماہ تین سو کے قریب لوگ مارے جاتے ہیں۔

کرکوک میں تیل کی پیداوار کے باعث اس شہر کا کنٹرول بہت اہم ہے۔ اس شہر میں عرب، ترک اور کردوں کی آبادی اکثریت میں ہے۔

اسی بارے میں