امریکہ: تارکین وطن کو شہریت دینے کے حق میں مظاہرے

امریکہ کی مختلف ریاستوں میں ہزاروں افراد نے غیر رجسٹرڈ تارکین وطن کو امریکی شہریت دینے کے حق میں مظاہرے کیے ہیں۔

یہ مظاہرے بیک وقت واشنگٹن، نیو یارک، سان فرانسسکو، اٹلانٹا اور درجن بھر دیگر ریاستوں میں کیے گئے۔

یہ مظاہرے اس وقت کیے گئے ہیں جب کانگریس امیگریشن کے اصلاحاتی بل پر بحث کر رہی ہے۔

واشنگٹن میں کیپیٹل ہل کے باہر ہزاروں افراد نے مظاہرہ کیا۔

کانگریس جلد ہی ایک بل متعارف کرانے جا رہی ہے جس کے تحت غیر رجسٹرڈ تارکین وطن کو قانونی حیثیت مل جائے گی۔

اس بل پر انیخابات کے بعد بحث کی جا رہی ہے۔ یاد رہے کہ ہسپانوی ووٹرز نے صدر براک اوباما اور ڈیموکریٹ جماعت کے امیدواروں کی حمایت کی تھی۔

ایک اندازے کے مطابق گیارہ ملین غیر رجسٹرڈ تارکین وطن میں سے زیادہ تعداد ہسپانوی باشندوں کی ہے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ریپبلکن جماعت اس بات کو مانتی ہے کہ اگر ہسپانوی ووٹرز کی حمایت حاصل کرنی ہے تو اس امیگریشن بل پر سمجھوتہ کرنا ضروری ہے۔

ان مظاہروں کے منتظمین کا کہنا ہے کہ چار سو بسوں میں لوگوں کو واشنگٹن لایا گیا ہے۔

ان مظاہرین سے مختلف سینیٹرز نے خطاب کیا۔

امریکی سینیٹ میں ایک قانون پر کام ہو رہا ہے جس کے تحت غیر رجسٹرڈ افراد کو قانونی حیثیت دینے سے قبل بارڈر سکیورٹی کو نہایت سخت کیا جائے۔

اس قانون کے تحت ہزاروں قانونی طور پر تارکین وطن امریکہ گیسٹ ورکر پروگرام کے تحت آ سکیں گے۔

لین اس بل کے ناقدین کا کہنا ہے کہ اس بل سے غیر قانونی تارکین وطن کی تعداد میں اضافہ ہو گا۔

اسی بارے میں