ترکی: جوہری پلانٹ کے منصوبے پر دستخط کی تیاری

Image caption جاپان کے وزیر اعظم شنزے ایبے ترکی کےدورے پر پہنچے ہیں

ترکی کی حکومت ملک میں جوہری پاور سٹیشن قائم کرنے لیے جاپان اور فرانس کی کمپنیوں کے ایک کنسورشیم کے ساتھ ایک معاہدہ کرنے والی ہے۔

امید کی جا رہی ہے کہ بائیس ارب ڈالر کے اس معاہدے پر دستخط جاپان کے وزیر اعظم شنزے ایبے کے دورہ ترکی کے دوران کیا جائے گا۔

جاپانی دو عشروں تک معاشی ترقی میں جمود کا سامنے کرنے کے بعد اپنی برآمدات کو بڑھانے کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔

اس کنسورشیم میں شامل کمپنیوں میں مٹسوبشی کارپوریشن بھی شامل ہے جو فوکوشیما جوہری پلانٹ کو تعمیر کرنے والے کمپنیوں میں سے ایک تھی۔

جاپان کی طرح ترکی میں تواتر کے ساتھ زلزلے آتے رہتے ہیں۔ترکی کی حکومت کا کہنا ہے کہ جوہری پلانٹ کی تعمیر کے لیے جاپانی کمپنی کے ساتھ معاہدے کی وجوہات میں زلزلوں سے نمٹنے کے سلسلے میں جاپان کی مہارت بھی شامل ہے۔

ترکی تیزی سے ترقی کرنے والے ممالک میں سے ایک ہے اور وہ اپنی توانائی کی ستانوے فیصد ضروریات برآمدات سے پورا کرتا ہے۔