سڈنی:11 افراد کو قتل کرنے کا اعتراف

Image caption نرسنگ ہوم میں درجنوں عمر رسیدہ افراد رہائش پذیر تھے

آسٹریلیا کے شہر سڈنی میں ایک نرسنگ ہوم میں آگ لگانے والے نرس نے گیارہ افراد کو قتل کرنے کے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔

کواکرز ہل نرسنگ ہوم میں اٹھارہ نومبر 2011 کو آگ لگنے سے گیارہ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

سینتیس سالہ راجر ڈین نے اعترافِ جرم نرسنگ ہوم میں آگ لگنے کے مقدمے کے دوران کیا۔ راجر ڈین کو آنے والے دنوں میں سزا سنائے جانے کا امکان ہے۔

آگ نے نرسنگ ہوم کی عمارت کو اپنی لپیٹ میں لیا تھا جس میں درجنوں عمر رسیدہ افراد رہائش پذیر تھے۔

آگ لگنے سے پانچ افراد موقع پر ہلاک ہوگئے جبکہ چھ افراد نے بعد میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ دیا تھا۔

سینکڑوں نفوس پر مشتمل آگ بجھانے والے عملے نے آگ پر قابو پانے کے لیے کام کیا تھا اور شعلوں اور دھوئیں کا مقابلہ کرتے ہوئے 80 سے زیادہ عمر رسیدہ افراد کو جلتی ہوئی عمارت سے نکلا۔

اس نرسنگ ہوم میں پانی چھڑکانے کا نظام نہیں تھا جبکہ اب نیو ساؤتھ ویلز میں ایسے رہائشی عمارتوں میں پانی چھڑکانے کا یہ نظام لگانا ضروری ہے۔

اسی بارے میں