میکسیکو میں برہنہ سائیکل سواری

Image caption میکسیکو سٹی میں سائیکل سواری کی اہمیت اجاگر کرنے کے لیے برہنہ ریلی نکالی گئي

میکسیکو کے دارالحکومت میکسیکو سٹی میں عالمی برہنہ سائیکل سواری کا دن منانے کے لیے ہزاروں کی تعداد میں برہنہ سائیکل سوار سڑکوں پر نکل آئے۔

اس کا مقصد سائیکل کے ذریعے ورزش کی اہمیت کو اجاگر کرنے اور لوگوں کو معدنی ایندھن کے کم سے کم استعمال کی جانب راغب کرنا تھا۔

تقریب کے منتظمین کا کہنا ہے کہ برہنہ سائیکل سواری سے انسانی جسم کی کمزوری بھی ابھر کر سامنے آتی ہے اور شہر کے مصروف راستوں پر ڈرائیوروں کو محتاط رہنے کی ضرورت کی بھی نشان دہی ہوتی ہے۔

یہ سالانہ تقریب نو سال قبل کینیڈا میں شروع ہوئی تھی اور اسے ہر سال دنیا کے مختلف شہروں میں منعقد کیا جاتا ہے۔

جب ہزاروں کی تعداد میں برہنہ اور نیم برہنہ سائیکل سوارشہر کے تاریخی مقامات سے گزرے تو لوگ متحیر انداز میں ساکت و جامد انھیں دیکھتے رہے۔ بعض لوگ تصویریں اتارنے لگے۔

یہ ریلی بالآخر شہر کے زوکالو سکوائر پر ختم ہوئی۔

اخباری نمائندوں کا کہنا ہے شہر میں کئی قسم کی سائیکل دوست پالیسیاں شروع کی گئی ہیں لیکن لاکھوں گاڑیوں کی موجودگی میں شہر کی سڑکوں پر سائیکل چلانا خاصا مشکل کام ہے۔

میلا نامی ایک سائیکلسٹ نے کہا کہ اپنے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لیے کپڑے اتارنا بہترین طریقہ ہے۔

انھوں نے کہا: ’میکسیکو میں سائیکل چلانا کسی خوفناک خواب سے کم نہیں۔ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ آپ کا کوئی وجود نہیں اور آپ کوئی بھوت ہیں۔‘

ان کی ساتھی سائیکل سوار یووانا فلوائڈ نے کہا: ’ہم ہر دن باہر نکلنے میں خوف محسوس کرتے ہیں۔ ہمیں یہ نہیں معلوم کہ ہم صحیح و سالم اپنے گھر لوٹیں گے بھی یا نہیں۔‘

میکسیکو کے میڈیا کے ایک اندازے کے مطابق اس مظاہرے میں 300 سائیکل سواروں نے حصہ لیا۔

اسی بارے میں