ننگا رائل میرین ایک بار پھر جیل روانہ

Image caption سٹیفن گاف کو اٹھائیس بار سزا سنائی جا چکی ہے

برطانیہ کی ایک عدالت نے ایک سابق برطانوی فوجی کو عوامی مقامات پر ننگا پھرنے سے باز رہنے کے عدالتی حکم کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں ایک بار پھر جیل روانہ کر دیا ہے۔

سابق برطانوی رائل میرین سٹیفن گاف ماضی میں عوامی مقامات پر ننگا گھومنے کے جرم میں اٹھائیسں بار سزا پا چکے ہیں اور وہ مجموعی طور پر چھ سال تک جیل میں گزار چکے ہیں۔

ساوتھ ہمٹن کی مجسٹریٹ کورٹ نے سٹیفن گاف کو اپنے مخصوص مقامات کو ڈھانپے بغیر کمرہ عدالت میں آنے کی اجازت نہیں دی۔ مجسٹریٹ نے صرف دس منٹ کی کارروائی کے بعد سٹیفن گاف کو گیارہ ماہ قید کی سزا کا اعلان کیا۔

چون سالہ سٹیفن گاف کا موقف ہے کہ یہ اس کا انسانی حق ہے کہ وہ جس حالت میں جہاں بھی جانا چاہے جا سکتا ہے۔

سٹیفن گاف پر الزام ہے کہ اس کے رویے کی وجہ سے دوسرے شہریوں کو شرمندگی اور پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

عدالت نے سٹیفن گاف پر پابندی عائد کر رکھی تھی کہ وہ اپنے مخصوص مقامات کو ڈھانپے بغیر عوامی مقامات پر نہ جائے لیکن سٹیفن گاف نے عدالتی حکم کوئی پرواہ نہیں کی۔

سٹیفن گاف ایک پچھلی پیشی پر عدالتی حکم کی نقل حاصل کرنے کے لیے صرف جوتے پہنے عدالت کی سیڑھیوں تک پہنچ گئے جہاں پولیس نے انہیں کپٹرے مہیا کرنے کی پیشکش کی لیکن انہوں اس پیشکش کو مسترد کر دیا۔

عدالت کی جانب سے سزا سنائے جانے کے بعد پراسیکیوٹر اینٹن ایلیرا نے کہا کہ عدالتی فیصلے سے عوام کو تسلی ہو گی کہ سٹیفن گاف کے اس رویے کو برادشت نہیں کیا جائے گا۔