بینکوں کی عالمی رینکنگ میں چین سرفہرست

Image caption چین کی معیشت میں بہتری سے بینکاری کا شعبہ بھی ترقی کر رہا ہے

دنیا بھر کے ایک ہزار بہترین بینکوں کی عالمی فہرست میں چین کا بینک پہلے نمبر پر آ گیا ہے۔

عالمی بینکوں پر کیے جانے والے سروے کے مطابق دنیا کے ہزار بہترین عالمی بینکوں کی فہرست میں انڈسٹریل اینڈ کمرشل بینک آف چین (آئی سی بی سی) پہلے جبکہ جے پی مورگن دوسرے اور بینک آف امریکہ تیسرے نمبر پر ہیں۔

گزشتہ سال کیے جانے والے بینکوں کے عالمی سروے میں چین کا آئی سی بی سی تیسرے نمبر پر تھا۔

چین کے آئی سی بی سی کا سرمایہ پندرہ فیصد اضافے کے بعد ایک سو ساٹھ ارب ڈالر سے تجاوز کر گیا ہے۔ جس سے بینک کی رینکنگ بہتر ہوئی ہے۔جبکہ سال 2012 میں آئی سی بی سی کے منافع میں چودہ فیصد بڑھا ہے۔

سروے کے مطابق سنہ 2008 میں برطانیہ کے بینکاری شعبے دوسرے نمبر پر تھا۔جو رواں سال کے سروے میں اب فرانس، برازیل اورر روس کے بینکاری شعبے سے پیچھے ہے۔

رپورٹ کا کہنا ہے کہ برطانیہ کا بینکاری کا شعبہ اب دسویں نمبر پر ہے۔

پہلے دس بینکوں میں جگہ بنانے والے برطانیہ کے واحد بینک ایچ ایس بی سی کے سرمائے کی مالیت ایک سو اکاون ارب ڈالر ہو گئی ہے اور بینک کو براعظم ایشیا میں اپنا آپریشن شروع کرنے سے کافی فائدہ ہوا ہے۔

چین کا دوسرا بڑا بینک چین کنسٹرکشن بینک عالمی بینکوں کی فہرست میں چوتھے نمبر پر ہے جبکہ اس فہرست میں سٹی بینک پانچوایں نمبر پر ہے۔

کاروباری جریدے دی بینکر کے مدیر برائن کیپلن کہتے ہیں کہ گزشہ کئی برسوں سے یورپی اور امریکی بینک جمود کا شکار ہیں جبکہ چینی بینک معاشی ترقی کے ساتھ بڑھ رہے ہیں۔

ایشیائی ممالک میں زیادہ کام کرنے والے برطانوی بینک سٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک وہ واحد برطانوی مالیاتی ادارہ ہے جس کی کارکردگی بہتر ہوئی ہے اور بینک کے منافع میں بھی تین فیصد اضافہ ہوا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ایک ہزار بینکوں کی رینکنگ میں چین کے چھیانوے بینک شامل ہیں جبکہ پہلے دس بینکوں میں بھی چین سے تعلق رکھنے والے چار بینک شامل ہیں۔

دی بینکر میگزین کے مدیر کا کہنا ہے کہ برطانیہ کے کامیاب بینک ایچ ایس بی سی اور سٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک کا بھی زیادہ تر انحصار ایشیا سے آنے والی آمدن پر ہے۔

سروے کے مطابق گزشتہ سال خسارے کا شکار ہونے والے بینکوں میں زیادہ تر یورپی ممالک کے بینک شامل ہیں جبکہ سب سے زیادہ نقصان برداشت کرنے والے پہلے دس بینکوں میں سے چھ ہسپانوی بینک ہیں۔

جائزہ رپورٹ کے مطابق عالمی کساد بازاری کے اثرات کم ہونے کے بعد دنیا کے ہزار بہترین بینکوں کے منافع میں اضافہ ہوا ہے۔

اسی بارے میں