سنوڈن کی انسانی حقوق کے کارکنوں سےملاقات

Image caption سنوڈن روس کے دارالحکومت ماسکو میں ایئر پورٹ پر ٹرانزٹ ایریا میں ہیں

روسی حکام نے تصدیق کی ہے کہ امریکہ کو مطلوب سی آئی اے کے سابق اہلکار ایڈورڈ سنوڈن نے ماسکو میں انسانی حقوق کی تنظیموں کے ساتھ ایک میٹنگ کی درخواست کی ہے۔

سنوڈن انسانی حقوق کے کارکنان سے ماسکو کے شیرمینتیوف ایئر پورٹ پر ہی ملاقات کرنا چاہتے ہیں جہاں اطلاعات کے مطابق وہ ٹرانزٹ ایریا میں موجود ہیں۔

ایئر پورٹ کے ترجمان ذحارنیوف کے مطابق ایڈورڈ سنوڈن نے جمعہ کے روز اس ملاقات کا دن طے کیا ہے۔

ایڈورڈ سنوڈن نے انسانی حقوق کی علمبردار تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل سمیت کئی اہم تنظیموں کو ملاقات کے لیے ایک ای میل بھیجی ہے۔

ایئر پورٹ کے ترجمان اینا ذخارنیوف نے اس میٹنگ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ یہ ٹرانزٹ ایریا میں مقامی وقت کے مطابق شام پانچ بجے ہوگي۔

انہوں نے فرانس کے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا ’ہم وہاں تک رسائی اور جگہ مہیا کریں گے۔‘

روس میں ایمنسٹی انٹرنیشنل کے سربراہ سرگی نکیتن نے کہا کہ انہیں اس سلسلے میں بلاوا ملا ہے اور وہ اس میٹنگ میں شرکت کا ارادہ رکھتے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق ماسکو کے ایک معروف وکیل جینرک پاڈوا بھی اس میٹنگ میں شریک ہوں گے۔

ہیومن رائٹس واچ کی نمائندہ تانیہ لوک شینا نے اپنے فیس بک پر مسٹر سنوڈن کی ای میل کے مواد کو اپنے فیس بک صفحے پر شائع کیا ہے۔

تیس سالہ سنوڈن نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ امریکی حکومت ان کی سیاسی پناہ کی کوشش کو ناکام بنانے کے لیے ’غیر قانونی مہم‘ چلا رکھی ہے۔

بیان کے مطابق ’یہ خطرناک قسم بڑھتی مہم صرف لاطینی امریکہ کے عزت و قار یا میری ذاتی سکیورٹی کے لیے خطرہ نہیں ہے بلکہ کسی بھی آزاد انسان کے لیے جو پراسیکیوشن سے بچنا چاہتا اس کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔‘

اس ای میل کے مطابق مسٹر سنوڈن ملاقات کے دوران آئندہ کے لائحہ عمل کے متعلق بات چيت کرنا چاہتے ہیں۔

ان کے پیغام میں اس بات کا بھی ذکر ہے کہ چونکہ سکیورٹی بہت سخت ہوگی اس لیے جو لوگ اس میٹنگ میں شریک ہونا چاہتے ہیں انہیں دعوت نامہ کی کاپی اور شناختی کارڈ ساتھ لانا ضروری ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارہ رائٹرز کا کہنا ہے کہ اسے سنوڈن کی طرف سے اس بات کی تصدیق کی گئی ہے کہ اس میٹنگ میں پریس کو آنے کی اجازت نہیں ہے اور وہ میڈیا کو کسی بڑے سٹیج سے خطاب کریں گے۔

یاد رہے کہ سابق امریکی جاسوس ایڈورڈ سنوڈن نے حال ہی میں امریکہ میں بڑے پیمانے پر انٹرنیٹ اور فون کالوں کی نگرانی کے پروگرام پرزم کے بارے میں راز افشاء کیے تھے جس کے بعد سے غداری کے مقدمے میں وہ امریکہ کو مطلوب ہیں۔

اسی بارے میں