لبنان: ترک ایئر لائن کے دو پائلٹ اغوا

ترک ایئر لائن کے پائلٹ
Image caption ترک ایئر لائن کے اغوا ہونے والے پائلٹ

لبنان کے دارالحکومت بیروت کے بین الاقوامی ہوائی اڈا کے قریب سے ترک ایئرلائن کے دو پائلٹوں کو اغوا کر لیا گیا ہے۔

انہیں عملے اور مسافروں کو ہوائی اڈے سے ہوٹل لے جانے والی بس سے اغوا کیا گیا ہے۔

اب تک کسی نے اس واقعے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے لیکن خیال کیا جا رہا ہے کہ اغوا کے اس واقعے کا تعلق شام میں جاری تنازعے سے ہے۔

ترکی شام میں سنّی باغیوں کا حامی ہے جبکہ لبنان کی شیعہ کمیونٹی شام کے صدر بشار الاسد کی حمایتی ہے۔

گزشتہ سال شام میں شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والے نو لبنانی شہریوں کو اغوا کر لیا گیا تھا اور ان کے خاندان والوں نے ترکی سے اپیل کی تھی کہ وہ ان کی رہائی کے لیے مدد کرے۔

لبنان کے وزیرِ داخلہ نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ اغوا ہونے والے افراد کو رات تین بجے ہوٹل لے جانے والی بس سے اغوا کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’اس بس پر ترک ایئر لائن کا عملہ سوار تھا جو ایئر پورٹ سے ہوٹل جا رہے تھے‘۔

اطلاعات کے مطابق اس واقعے میں چار مسلح افراد شامل تھے۔

ترکی کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے خبر رساں ادارے رائٹرز کو بتایا کہ وہ لبنانی حکام سے رابطے میں ہیں اور تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا ’اب تک ہمیں یہ معلوم نہیں ہو سکا ہے کہ یہ کس نے کیا ہے اور کس مقصد کے تحت کیا ہے‘۔

اسی بارے میں