زارا کی خالق روزالیہ میرا کا انتقال

Image caption انہوں نے زارا کو دنیا کے سب سے بڑے فیشن برینڈ میں سے ایک بنانے میں کلیدی کردار ادا کیا

سپینش فیشن کمپنی انڈیٹیکس جو مشہور برینڈ زارا کی مالک ہے کی شریک خالق روزالیہ میرا کا گزشتہ روز سپین میں انتقال ہو گیا۔

سپین کے مقامی میڈیا کے مطابق سپین کی امیر ترین خاتون کو چھٹیوں کے دوران دل کا دورہ پڑا۔

روزالیہ میرا سپینش جزیرے منورکا میں چھٹیاں گزار رہی تھیں جہاں سے انہیں واپس شمالی سپین میں کورونا لایا گیا جہاں ان کا انتقال انہتر برس کی عمر میں ہوا۔

روزالیہ میرا نے گیارہ سال کی عمر میں سکول چھوڑ کر ایک درزی کے طور پر کام شروع کیا جس کے بعد انہوں نے اپنے سابق شوہر امانیشیو اورٹیگا کے ساتھ مل کر انڈیٹکس کی بنیاد رکھی۔

انہوں نے اس کمپنی کو دنیا کے سب سے بڑے فیشن برینڈ میں سے ایک بنانے میں کلیدی کردار ادا کیا۔

اس وقت انڈیٹکس کے تین بڑے برینڈز زارا، ’میسومو دتی‘ اور ’برشکہ‘ کی مالک ہے۔

انڈیٹکس گروپ کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں میرا کے خاندان والوں سے دلی تعزیت کا اظہار کیا گیا اور کمپنی کی ترقی میں ان کی خدمات کا ذکر کیا گیا۔

اس مشکل وقت میں اپنی نیک تمنائیں اور دلی تعزیت میرا اور ان کے خاندان

بی بی سی کے ٹام برج کے مطابق میرا نے کبھی شہرت کی تمنا نہیں کی اور بہت کم انٹرویوز دیے۔

انہوں نے کہا کہ ’میرا کی کہانی غربت سے امارت کی کہانی ہے اور اسی نے ان کی زندگی کے خدوخال طے کیے اور یہ کہ امرا کے پیسے کو فخر یا تکبر کے لیے استعمال نہیں کی جانی چاہیے۔‘

میرا نے اپنے سابقہ شوہر اورٹیگا سے بیس سال کی شادی کے بعد 1986 میں طلاق حاصل کر لی تھی۔

سپین کے اخبار ایل پی آس کے مطابق انہوں نے کپمنی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کو 2004 میں چھوڑ دیا مگر اس کے باوجود ان کا کمپنی میں سات فیصد حصہ تھا۔