قندہار: خودکش حملے میں پانچ افراد ہلاک

Image caption اطلاعات کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں پولیس اور سولین شامل ہیں

افغانستان کے مشرقی شہر قندہار میں ایک بینک کے باہر ہونے والے خودکش دھماکے میں پانچ افراد ہلاک اور تقریباً بیس زخمی ہوگئے ہیں۔

یہ واقعہ سنیچر کی صبح اس وقت ہوا جب لوگ سکیورٹی چیک پوسٹ کو پار کرکے کابل بینک میں داخل ہو رہے تھے۔ زیادہ تر لوگ بینک سے اپنی تنخوا نکالنے کے لیے وہاں گئے تھے۔

اطلاعات کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں پولیس اور سولین شامل ہیں۔

ابھی تک کسی نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔

افغانستان شدت پسندوں کی طرف سے خودکش حملوں اور بم دھماکوں کی زدہ میں ہے۔

جمعے کو افغان حکام کے مطابق صوبہ قندوز میں نمازِ جنازہ کے دوران ایک خودکش حملے میں ضلعی گورنر سمیت سات افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی طرح جمعرات کو ملک کے مغربی صوبے فرا میں پولیس کے ایک گشتی پارٹی پر حملے میں پندرہ پولیس اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

کابل میں بی بی سی کے نامہ نگار کارن ایلن کا کہنا ہے کہ شدت پسندوں کی طرف سے کارروائیوں کا مقصد افغان پولیس اور آرمی کے اعتماد کو ٹھیس پہنجانا ہے۔

خیال رہے کہ افغانستان میں تعینات غیر ملکی افواج کا انخلا منصوبے کے مطابق آئندہ سال سے شروع ہونا ہے اور اس کے بعد ملک کی سکیورٹی کی ذمے داریاں افغان سکیورٹی فورسز کے پاس چلی جائیں گی۔

ماہرین افغانستان کی طرف سے امن و امان کی صورتِ حال کو برقرار رکھنے کو بڑا چیلنج قرار دے رہے ہیں

اسی بارے میں