فرانسیسی پہاڑ پر ’میڈ ان انڈیا‘ جواہرات

Image caption موں بلاں کے گلیشیئر مسلسل متحرک رہتے ہیں

یورپی پہاڑی سلسلے الپس کے پہاڑ موں بلاں پر کوہ پیمائی کرنے والے ایک فرانسیسی باشندے کو قیمتی جواہرات سے بھرا ہوا ایک ڈبہ ملا ہے۔

اس ڈبے پر ’میڈ ان انڈیا‘ تحریر ہے اور خیال کیا جا رہا ہے کہ ڈبہ اس پہاڑی علاقے میں کئی دہائیوں پہلے تباہ ہونے والے ایئر انڈیا کے دو طیاروں میں سوار کسی مسافر کا ہو سکتا ہے۔

سنہ 1950 اور 1966 میں اس علاقے میں ایئر انڈیا کے دو جہاز گر کر تباہ ہوئے تھے۔

خبر رساں ایجنسی اے پی کے مطابق فرانسیسی پولیس کے کمانڈر سلوین مرلي نے کہا کہ موں بلاں کے پہاڑ پر چڑھنے والے ایک گلیشیئر پر تجربہ کار کوہ پیما کو یہ دھاتی ڈبہ ملا جسے اس نے پولیس کے حوالے کر دیا۔

فرانسیسی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ لاکھوں ڈالر مالیت کے جواہرات سے بھرے اس ڈبے کے دریافت کی معلومات عام کرنے کا مقصدر اس کے اصلی مالک کی تلاش ہے۔

مرلي نے کہا کہ جوتے کے باکس سے تھوڑے بڑے اس ڈبے میں جواہرات کو چھوٹی چھوٹی تھیلیوں میں رکھا گیا ہے اور ان میں سے زیادہ تر یاقوت، زمرد اور نیلم ہیں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس فرانسیسی پہاڑ پر تباہ ہونے والے طیاروں کا ملبہ اس وقت سطح پر آتا رہتا ہے جبکہ وہاں کے گلیشیئر حرکت کرتے ہیں۔

پولیس افسر نے کہا کہ کوہ پیما نے اس باکس کو فوری طور پر پولیس کو سونپ دیا جس سے ثابت ہوتا ہے کہ لوگوں میں اب بھی ایمانداری باقی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کوہ پیما اسے اپنے پاس رکھ سکتا تھا لیکن ان کا خیال تھا یہ قیمتی چیزیں کسی ایسے شخص کی ہیں جس کی اس حادثے میں موت ہوئی تھی۔

ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ اگر اس ڈبے کا کوئی دعویدار سامنے نہیں آتا تو تو ان زیورات کا کیا ہوگا۔