اٹلی کا سیاسی بحران پارلیمان میں

Image caption اٹلی کی پارلیمان میں بدھ کو اعتماد کے ووٹ پر رائے شماری ہو گی

اٹلی کے وزیرِ اعظم انریکو لیٹّا نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ نئے انتخابات سے بچنے کے لیے بدھ کو پارلیمان سے اعتماد کے ووٹ کا مطالبہ کریں گے۔

اٹلی کی پارلیمان میں بدھ کو اعتماد کے ووٹ پر رائے شماری ہو گی۔

اٹلی کے سابق وزیراِعظم سلویو برلسکونی اور موجودہ وزیر اعظم انریکو لیٹّا کی سینٹرلیفٹ جماعت کےتعلقات خراب ہو گئے ہیں۔

اٹلی میں سیاسی بحران، متبادل اتحاد کی تلاش

برلسکونی کی ٹیکس فراڈ کیس میں سزا برقرار

اتوار کو اٹلی کی کابینہ سے سابق وزیرِاعظم کی جماعت کے پانچ وزراء نے استعفے دے دیے تھے۔

اطالوی صدرجیورجیو نیپولیٹانو نے وزیرِ اعظم سے ملاقات کے بعد کہا کہ باغی وزرا کے استعفوں کے بعد بحرانی کیفیت پیدا ہو گئی ہے جس کی وجہ سے انریکو لیٹّا پارلیمان سے رجوع کریں گے۔

روم میں موجود بی بی سی کے نامہ نگار ایلن جانسٹن کے مطابق وزیرِ اعظم انریکو لیٹّا کو یقین ہے کہ ان کی سینٹرلیفٹ جماعت کو حکومت چلانے کے لیے پارلیمان میں مطلوبہ اکثریت حاصل ہے۔

اطالوی صدرجیورجیو نیپولیٹانو اس بات کی کوشش کر رہے ہیں کہ کوئی نیا اتحاد بن سکے اور نئے انتخابات نہ کرانا پڑے۔

سنیچر کو صدر نیپولیٹانو نے ملک میں سیاسی تسلسل کی اپیل کی تھی۔

اطالوی صدر نے اتوار کو وزیراعظم سے ملاقات سے پہلے کہا تھا کہ وہ صرف اسی صورت میں پارلیمان تحلیل کریں گے جب پارلیمان میں اکثریت ثابت کرنے کا کوئی موقع ختم نہیں ہو جاتا۔

اس سے قبل اٹلی کے سابق وزیراعظم برلسکونی نے دھمکی دے تھی کہ اگر ان کو ٹیکس فراڈ کے معاملے میں سینیٹ سے نکالا گیا تو وہ اپنی جماعت سے تعلق رکھنے والے وزراء کو حکومت سے الگ کر دیں گے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر اطالوی صدر کسی نئے اتحاد کو سامنے لانے میں ناکام ہوتے ہیں تو معاشی مسائل سے دوچار اٹلی میں اس بحران کے نتیجے میں نئے انتخابات کرانے پڑ سکتے ہیں۔

برلسکونی کی جماعت پیپل آف فریڈم (پی ڈی ایل) سیلز ٹیکس میں حکومت کے مجوزہ اضافے کے خلاف ہے ہر چند کہ اٹلی کے بڑے قرضوں کو کم کرنے کے ضمن میں یہ حکومت کی وسیع پالیسی کا حصہ ہے۔

عدالت کی طرف سے ٹیکس فراڈ کے مقدمے میں برلسکونی کی سزا برقرار رکھنے کے بعد سینیٹ کی ایک کمیٹی آئندہ ہفتے برلسکونی کو سینیٹ سے نکالنے یا نہ نکالنے کا فیصلہ کرے گی۔

برلسکونی سے منسلک قانونی مسائل کو حکومت کے اتحاد میں تنازع کی بڑی وجہ کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

ایک اطالوی عدالت نے سابق وزیرِاعظم سلویو برلسکونی کو اپنے عہدے کا ناجائز فائدہ اٹھانے اور کم عمر طوائف سے جنسی تعلقات قائم کرنے کے جرم میں سات برس قید کی سزا سنا رکھی ہے اور ان پر ٹیکس فراڈ کا بھی الزام ہے۔

اسی بارے میں