روس: وولگوگراد کے ٹرین سٹیشن میں خودکش دھماکہ، 16 ہلاک

روس کے انسداد دہشت گردی کمیٹی کا کہنا ہے کہ ملک کے جنوبی شہر وولگوگراد کے ٹرین سٹیشن میں خودکش دھماکے کے نتیجے میں کم از کم 16 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

کمیٹی کے مطابق ابتدائی تحقیقات کے بعد خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ یہ خودکش دھماکہ ایک عورت نے کیا ہے۔

واضح رہے کہ وولگوگراد ہی میں اکتوبر میں ایک خاتون خودکش بمبار نے ایک بس کو نشانہ بنایا تھا جس میں چھ افراد ہلاک ہوئے تھے۔

روسی حکام کو تشویش ہے کہ سرما اولمپکس سے قبل شدت پسندوں کے حملوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔ یاد رہے کہ سرما اولمپکس چھ ہفتے بعد روس کے شہر سوچی میں منعقد ہوں گے۔

وولگوگراد ماسکو سے نو سو کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔

کریملن کے ترجمان کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ روسی صدر پیوتن نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایت کی ہے کہ سکیورٹی کو مزید سخت کردیا جائے۔

فیڈرل پولیس کے ترجمان نے کہا ہے کہ اس دھماکے کے بعد تمام ٹرین سٹیشنز اور ہوائی اڈوں پر سکیورٹی مزید سخت کردی گئی ہے۔

روسی خبر رساں ادارے انٹر فیکس کے مطابق یہ دھماکہ ٹرین سٹیشن کے داخلی راستے پر نصب چیکنگ کی مشین کے قریب ہوا۔

اس دھماکے کی ذمہ داری ابھی تک کسی تنظیم نے قبول نہیں کی ہے۔

قومی انسداد دہشت گردی کمیٹی کی جانب سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے ’ابتدائی تحقیقات کے مطابق یہ خود کش دھماکہ ایک خاتون حملہ آور نے کیا ہے۔‘

رواں سال جولائی میں چیچن جنگجوؤں کے سربراہ نے انٹرنیٹ پر ایک ویڈیو پیغام ڈالا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ سرما اولمپکس سے قبل زیادہ سے زیادہ حملے کیے جائیں۔

اسی بارے میں