’سیلفی‘ اور ’ہیش ٹیگ‘پابندی کے لائق الفاظ

Image caption حال ہی میں نیلسن منڈیلا کی یاد میں تقریب کے دوران امریکی صدر اور ڈنمارک اور برطانیہ کے وزرائے اعظم کی ’سیلفی‘ بہت مشہور ہوئی تھی

’سیلفی،‘ ’ٹوئرکنگ‘ اور ’ہیش ٹیگ‘ جیسے الفاظ ایک امریکی کالج کی پابندی کے لائق الفاظ کی سالانہ فہرست میں سب سے اوپر رہے ہیں۔

لیک سپیریئر سٹیٹ یونیورسٹی گذشتہ 38 برس سے ہر سال عوامی جائزے کے بعد ایسے الفاظ کی فہرست جاری کرتی ہے جنھیں عوام لغت میں دیکھنا پسند نہیں کرتے۔

یہ فہرست مرتب کرنے والوں نے تجویز دی ہے کہ ان الفاظ کو ان کے غلط استعمال، ضرورت سے زیادہ استعمال یا پھر بےکار ہونے کی وجہ سے ’کوئینز انگلش سے نکال دینا چاہیے۔‘

گذشتہ برس اس فہرست میں ’ڈبل ڈاؤن،‘ ’بکٹ لسٹ‘ اور ’یولو‘ (یو اونلی لِو ونس) جیسے الفاظ شامل تھے۔

ایل ایس ایس یو کی 2014 کی فہرست میں سب سے زیادہ نامزد ہونے والا لفظ ’سیلفی‘ تھا۔

’سیلفی‘ کسی فرد کی ایسی تصویر کو کہا جاتا ہے جو اس نے خود کھینچی ہو۔ آکسفرڈ ڈکشنریز نے گذشتہ ماہ ہی اسے ’سال کا لفظ‘ قرار دیا تھا۔

اس لفظ پر تنقید کرنے والے امریکی ریاست وسکانسن کے ڈیوڈ نے کہا کہ ’اپنے سمارٹ فون کو پرے رکھ دو۔ کسی کو آپ کی پروا نہیں۔‘

رقص کے انداز ’ٹوئرک‘ کو بھی اسی قسم کی ناپسندیدگی کا سامنا کرنا پڑا۔ نیویارک سے تعلق رکھنے والی لیزا کا کہنا تھا کہ ’ٹوئرکنگ زبان دانی میں ہماری پستی کا ایک نیا معیار ہے۔‘

فہرست مرتب کرنے والوں نے روزمرہ کی زبان میں سوشل میڈیا کی ’ہیش ٹیگ‘ اور ’ٹوئٹرسفیئر‘ جیسی اصطلاحات کے بڑھتے ہوئے استعمال پر بھی افسوس کا اظہار کیا ہے۔

یہ واضح نہیں کہ اس فہرست کے مرتب کیے جانے سے مذکورہ الفاظ کے استعمال میں کمی کا کوئی امکان ہے یا نہیں۔

اسی بارے میں