برطانوی ممبراِن پارلیمنٹ کے مجسموں کے انداز

ٹونی بلیئر تصویر کے کاپی رائٹ pa
Image caption ٹونی بلیئر کی یہ پورٹریٹ 2008 میں بنائی گئی تھی

روزنامہ ’ایوننگ سٹینڈرڈ کے اعداد و شمار کے مطابق برطانوی پارلیمان کی ایک کمیٹی نے ارکانِ پارلیمان کی پورٹریٹ اور مجسمے بنوانے کے لیے 1995 سے اب تک ڈھائی لاکھ پاؤنڈ خرچ کیے ہیں۔

آرٹ سے متعلق مشاورتی کمیٹی کے سپیکر کا کہنا تھا کہ کمیٹی ایسے لوگوں کے انتخاب پر زور دیتی ہے جنہوں نے پارلیمان میں گراں قدر خدمات انجام دی ہوں۔

اس کے علاوہ کمیٹی نے خواتین پارلیمان کی پورٹریٹس بھی بنوانے کی سفارش کی ہے۔

جس کا مقصد یہ تھا کہ گزشتہ ایک دہائی میں خواتین کی نمائندگی میں آنے والی تبدیلیوں کو بھی منظرِ عام پر لایا جا سکے۔

سابق برطانوی وزیرِاعظم ٹونی بلیئر کی پورٹریٹ 2008 میں فنکار فِل ہیل نے بنایا تھا۔

لیبر پارٹی کی ڈینی ایبٹ 1987 میں برطانیہ کی پہلی سیاہ فام خاتون رکن پارلیمان بنیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ parliament
Image caption لیبر پارٹی کی ڈینی ایبٹ 1987 میں برطانیہ کی پہلی سیاہ فام خاتون رکن پارلیمان بنیں۔

انھیں بائیں بازو کے نظریہ کی حامی تصور کیا جاتا تھا جنہوں نے بلیئر حکومت کے دوران کئی امور پر بغاوت کی۔

ان میں ہیتھرو ہوائی اڈے پر تیسرا رن وے، ٹیوشن فیس اور عراق میں جنگ جیسے امور شامل تھے جن پر انھوں نے بلیئر حکومت کی مخالفت کی ۔

سابق برطانوی وزیرِاعظم اور ممبر پارلیمان بیرونس تھیچر کی خدمات پر ان کا مجسمہ سنہ 2007 اینٹونی ڈیوفرڈ نے بنایا تھا جو برطانوی دارالعوام یا ہاوس آف کامنز کے چیمبر کے بلکل باہر لگایا گیا ہے۔

مجسمے سابق وزیر اعظم تھیچر کی شخصیت کی پوری طرح عکاسی کرتا ہے اور اس کا انداز بڑا تحکمانہ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption مارگریٹ تھیچر کا مجسمہ 2007 اینٹونی ڈیوفرڈ نے بنایا تھا

دیگر تین سابق وزراعظم ڈیوڈ لائڈ جارج، ونسٹن چرچل، اور کلیمنٹ ایٹلی کے مجسمے بھی مارگریٹ تھیچر کی طرح نمایاں طور پر لگائے گئے ہیں۔

بیرونس بوتھ رائڈز کامنّ کے 700 سال کی تاریخ میں سنہ 1992 میں دارالعوام کی پہلی خاتون سپیکر بنیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption بیرونس بوتھ رائڈز بہت ہح سخت اور اصول پسند سپیکر تھیں

حالانکہ ممبرانِ پارلیمنٹ انھیں پسند کرتے تھے لیکن وہ بہت اصول پسند اور سخت سپیکر تھیں اور کارروائی میں خلل ڈالنے والوں کے ساتھ سختی سے پیش آتی تھیں۔ان کی پورٹریٹ سنہ 1999 میں جین بونڈ نے بنایا تھا۔

پورٹریٹ میں انھوں نے سرخ رنگ کا انتہائی خوبصورت کوٹ پہنا ہوا ہے جس پر سنہرے رنگ سے کڑھائی ہوئی ہے۔

اسی بارے میں