ایئرلائن کمپنیاں شو بمباروں سے ہوشیار رہیں: امریکہ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption امریکی ہوم لینڈ سکیورٹی کی جانب سے حالیہ ہفتوں میں امریکہ کی ایئرلائن کمپنیوں کو یہ دوسری وارننگ ہے

امریکی حکومت نے ایئرلائن کمپنیوں کو خبردار کیا ہے کہ شدت پسند جوتوں میں دھماکہ خیز مواد چھپا کر جہازوں پر سوار ہو سکتے ہیں۔

امریکہ کی ہوم لینڈ سکیورٹی نے کسی خاص دھمکی یا منصوبے کا ذکر نہیں کیا، البتہ اس نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ امریکہ آنے والی پروازوں پر جوتوں میں دھماکہ خیز مواد چھپا کر لایا جا سکتا ہے۔

حالیہ ہفتوں میں یہ دوسری بار ہے کہ امریکہ نے جہاز پر دھماکہ خیز مواد کے ساتھ سوار ہونے سے متعلق وارننگ جاری کی ہے۔

امریکہ نے سوچی اولمپکس کے شروع ہونے سے پہلے ایئرلائن کمپنیوں کو خبردار کیا تھا کہ دہشت گرد روس جانے والی پروازوں پر ٹوتھ پیسٹ ٹیوبوں میں دھماکہ خیز مواد چھا کر طیارہ تباہ کرنے کی کوشش کر سکتے ہیں۔

جوتوں میں دھماکہ خیز مواد چھپا کر طیارہ تباہ کرنے کی کوشش نئی نہیں ہے۔ اس سے پہلے 2001 ایک نو مسلم برطانوی گلوکار رچرڈ ریڈ نے پیرس سے میامی جانےوالے ایک جہاز کو جوتوں میں دھماکہ خیز مواد کے ذریعےتباہ کرنے کی ناکام کوشش کی تھی۔

2009 میں ایک نائجیرین شہری عمر فاروق عبدالمطلب انڈرویئر میں دھماکہ خیر مواد چھپا کر طیارے میں سوار ہوگئے تھے لیکن وہ طیارہ تباہ کرنے کی کوشش میں کامیاب نہیں ہو سکے تھے۔

اس کے علاوہ 2006 میں تین برطانوی مسلمانوں نے امریکہ جانے والوں جہازوں کو مشروبات کی بوتلوں میں دھماکہ خیز مواد چھپا کر تباہ کرنے کی ناکام کوشش کی تھی۔