امریکہ: ٹریفک میں پھنسے ڈرائیور نے بچے کی زندگی بچائی

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption سباسچیئن اب ہسپتال میں ہے اور اس کی حالت خطرے سے باہر ہے

امریکی شہر میامی کی موٹر وے پر پھنسے ہوئے ڈرائیورز نے ایک نوزائیدہ بچے کی جان بچائی جس کو سانس نہیں آ رہا تھا۔

سینتیس سالہ پامیلا روسیو کا بھانجا سباسچیئن کو سانس آنا بند ہو گیا تھا اور وہ نیلا پڑ رہا تھا۔ پامیلا نے اپنی گاڑی میامی کی ڈولفن ایکسپریس وے پر روکی اور مدد کے لیے پکارا۔

ایک خاتون نے فوری طور پر روسیو کی مدد کی اور نوزائیدہ بچے کو مصنوعی طریقے سے آکسیجن دی۔

سباسچیئن اب ہسپتال میں ہے اور اس کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

روسیو نے میامی ہیرلڈ کو بتایا کہ ان کے حواس اس وقت خطا ہو گئے جب انہوں نے دیکھا کہ ان کا بھانجا سباسچیئن کو سانس نہیں آ رہا۔

’میری بہن نے اپنا بچہ میرے حوالے کیا تھا۔‘

روسیو نے جب دیکھا کہ بچہ نیلا پر رہا ہے تو وہ فوراً گاڑی سے نیچے اتریں اور مدد کے لیے پکارا۔ لوسیلا گوڈوئے فوراً گاڑی میں اپنا تین سالہ بچہ چھوڑ کر روسیو کی گاڑی کے قریب پہنچیں اور بچے کو منہ کے ذریعے آکسیجن دی۔

میامی ہیرلڈ کے فوٹوگرافر ایل ڈیاز روسیو کی پچھلی گاڑی ہی میں تھے۔ ’میں نے چیخ و پکار سنی اور روسیو کہہ رہی تھیں کہ بچے کو سانس نہیں آ رہا۔‘

ایل ڈیاز نے بتایا کہ وہ بھی اپنی گاڑی سے نیچے اترے اور موٹر وے پر پھنسی دیگر گاڑیوں سے مدد مانگنے لگے۔ ڈیاز کو پولیس اہلکار ملے جنہوں نے لوسیلا کے بعد بچے کو ابتدائی طبی امداد دی۔

پولیس اہلکار نے بعد میں مقامی میڈیا کو بتایا کہ وہ پولیس میں گزشتہ تین سال سے ہیں لیکن یہ پہلا موقع ہے کہ ان کو ایسی صورتحال کا سامنا کرنا پڑا۔