ہٹلر کی کتابیں 65 ہزار ڈالر میں نیلام

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اس کتاب جس کا نام میری جدوجہد ہے اور یہ ہٹلر کی یہودیت اور اشتراکیت کے خلاف جدوجہد پر تحریر کردہ ہے

امریکی شہر لاس اینجلیس میں ایڈولف ہٹلر کا دو جلدوں پر مشتمل ایک خودنوشت مقالہ ’مائن کیمپف‘ 64850 ڈالر میں فروخت ہوا۔

اس مقالے کی اہم بات یہ ہے کہ اس پر ہٹلر کے آٹوگراف بھی موجود ہیں۔

یہ کتابی شکل میں شائع شدہ مقالہ 1925 اور 1926 میں شائع ہوئے اور انہیں ایک نامعلوم امریکی خریدار نے نیلام گھر ’نیٹ اینڈ سینڈرز‘ سے خریدا۔

ہٹلر کے دستخطوں کے ساتھ یہ دونوں جلدیں کپڑے کے ساتھ جلد بند کی گئی ہیں اور ان میں سے ایک پہلا ایڈیشن ہے اور دوسری جلد میں دوسرا ایڈیشن شائع کیا گیا ہے۔

یہ دونوں کتابیں ہٹلر نے نازی پارٹی کے ایک رکن جوزف بیوئر کو دی تھیں اور ان پر کرسمس کے موقع پر نیک تمناؤں کا اظہار کیا گیا ہے۔

جوزف بیوئر نازی پارٹی کے اولین اراکین میں سے ایک تھے اور ایک ایس ایس افسر تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ دونوں کتابیں ہٹلر نے نازی پارٹی کے ایک رکن جوزف بیوئر کو دیں تھیں اور ان پر کرسمس کے موقع پر نیک تمناؤں کا اظہار کیا گیا ہے

ان کتابوں کی نیلامی گیارہ بولیاں موصول ہوئیں اور بولیوں کا آغاز بیس ہزار ڈالر سے ہوا جو جمعرات کی رات کو ختم ہوئیں۔

ہٹلر نے یہ کتاب ان دنوں میں لکھی جب انہیں 1923 میں ناکام بغاوت کے نتیجے میں جیل بھیجا گیا تھا۔

اس کتاب جس کا نام میری جدوجہد ہے اور ان کی یہودیت اور اشتراکیت کے خلاف جدوجہد کو بیان کرتی ہے۔

یہ کتاب ہٹلر کے جرمن چانسلر بننے سے قبل کی شائع کی گئی ہے۔

اسی بارے میں