’سابق فرانسیسی صدر کے فون کی خفیہ ریکارڈنگ کی گئی‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption فون کی نگرانی کا حکم دینے والے تفتیشکار ان الزامات کو پرکھ رہے تھے کہ فرانسیسی صدر نے لیبیا کے انجہانی سربراہ معمار قذافی سے غیر قانونی طور پر اپنی انتخابی مہم کے لیے پیسے لیے

اطلاعات کے مطابق فرانس میں انتخابی مہمات کے لیے مبینہ طور پر لیبیا سے ملنے والی رقوم کی تفتیش کرنے والی ایک عدالت کے حکم پر گذشتہ ایک سال سے سابق فرانسیسی صدر نکولاس سرکوزی کے فون کی نگرانی کی جا گئی ہے۔

اخبار لے موند کا کہنا ہے کہ صدر کے فون کی نگرانی سے عدالتی نظام میں مداخلت کے شواہد سامنے آئے ہیں۔ اخبار کا دعویٰ ہے کہ ملک کی اعلیٰ ترین عدالت کے ایک پراسیکیٹر صدر کو خفیہ معلومات فراہم کر رہے تھے۔

صدر سرکوزی کے وکیل نے ان الزامات کی تردید کی ہے اور ان کا کہنا ہے کہ ان کے موکل کے فون کی بگرانی غیر قانونی تھی۔

پیرس میں بی بی سی کے نامہ نگار ہیؤ سکوفیلڈ کا کہنا ہے کہ فون کی نگرانی کا حکم دینے والے تفتیشکار ان الزامات کو پرکھ رہے تھے کہ فرانسیسی صدر نے لیبیا کے انجہانی سربراہ معمار قذافی سے غیر قانونی طور پر اپنی انتخابی مہم کے لیے پیسے لیے۔

اخبار لے موند کے مطابق صدر سرکوزی کو اپنے ماضی کے بارے میں ہونے والی تفتیش کے بارے میں خفیہ اطلاعات فراہم کی جا رہی تھیں جن کے عوض صدر نے اپنے مخبر کو موناکو میں ایک سرکاری عہدہ نوازا۔

صدر سرکوزی کے وکیل نے جمعے کے روز کہا کہ ان کے موکل کے فون کی شاید اس وقت بھی نگرانی کی جا رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ سارا معاملے ان کے خلاف ایک سیاسی چال ہے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ’انصاف کے عمل پر متاثر ہونے کی کوئی کوشش نہیں کی گئی اور وقت کے ساتھ یہ ظاہر ہو جائے گا کہ یہ ایک سیاسی معاملہ ہے۔‘

ہمارے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ نکولاس سرکوزی عملی سیاست میں واپسی کا منصوبہ بنا رہی ہیں اور ان الزامات سے انہیں نقصان ہوگا۔

2011 میں کرنل قذافی کے صاحبزادے سیف الاسلام نے صدر سرکوزی پر الزام لگایا تھا کہ انہوں نے اپنی انتخابی مہم کے لیے ان کے والد سے غیر قانونی طور پر رقوم حاصل کیں۔

واضح رہے کہ جب یہ المام لگایا گیا اس وقت فرانس لیبیا میں نیٹو فوجی مداخلت کی سربراہی کر رہا تھا۔

2012 میں فرانسوا اولاند سے صدارتی انتخاب میں شکست کھانے والے نکولاس سرکوزی پر فرانس کی امیر ترین خاتون لیلیئین بیٹن کورٹ سے بھی انتخابی مہم کے لیے غیر قانونی عطیات حاصل کرنے کا الزام ہے۔

اسی بارے میں