دوسری جنگ عظیم کے خاتمے کی مشہور تصویر کے سیلر انتقال کر گئے

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption گلین کی بیٹی کے مطابق گلین 86 سال کی عمر میں ڈیلس میں ایک نرسنگ ہوم میں انتقال کر گئے ہیں

امریکی بحریہ کا وہ اہلکار جو دوسری جنگِ عظیم کی مشہور فوٹو میں ایک خاتون کا بوسہ لے رہا ہے کا انتقال ہو گیا ہے۔

گلین میک ڈفی نامی امریکہ بحریہ کا یہ سیلر اس تصویر میں ہیں اور یہ تصویر بہت مشہور ہوئی تھی۔

گلین کی بیٹی کے مطابق گلین 86 سال کی عمر میں ڈیلس میں ایک نرسنگ ہوم میں انتقال کر گئے ہیں۔

گلین کا دعویٰ تھا کہ وہ دوسری جنگ عظیم میں جیت کی خوشی منانے کی اس فوٹوں میں وہ سیلر تھے جو ایک خاتون اپنی بانہوں میں لے کر بوسا لے رہے ہیں۔

گلین کے اس دعوے کی تصدیق پولیس کے فورینسک آرٹسٹ نے بھی کی ہے۔

یہ مشہور تصویر فوٹو گرافر ایلفرڈ نے 14 اگست 1945 کو لی تھی جب جاپان کے ہتھیار ڈالنے کی خبریں نیو یارک کے ٹائمز سکوائر میں آنا شروع ہوئی تھیں۔

گلین نے امریکی میڈیا کو بتایا تھا کہ وہ سب وے ٹرین تبدیل کر رہے تھے جب انہوں نے جاپان کے ہتھیار ڈالنے کی خبر سنی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس وقت ان کی عمر 18 برس تھی اور وہ اپنی گرل فرینڈ سے ملنے جا رہے تھے۔

’خبر سن کر میں بہت خوش ہوا اور اسی وقت مجھے ایک نرس نظر آئی۔ نرس مجھے خوشی سے چیختا دیکھ رہی تھی اور اس کے چہرے پر مسکراہٹ تھی۔ میں اس کی طرف بڑھا اور اس کو بوسا دیا۔‘

اس تصویر میں جو نرس تھیں وہ ایڈیتھ شین تھیں جو ایک قریبی ہسپتال میں کام کرتی تھی۔ ایڈیتھ کا انتقال 2010 میں ہوا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption گلین نے امریکی میڈیا کو بتایا تھا کہ وہ سب وے ٹرین تبدیل کر رہے تھے جب انہوں نے جاپان کے ہتھیار ڈالنے کی خبر سنی