12 سالہ گرل سکاؤٹ نے 34 سالہ ریکارڈ توڑ دیا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption کیٹی فرانسس نے 30 مارچ تک 20000 ڈبوں کی فروخت کا ہدف مقرر کر لیا ہے

امریکہ میں ایک سکاؤٹ گرل نے سات ہفتوں میں بسکٹوں کے 18,107 ڈبے فروخت کر کے اپنی تنظیم کا ملکی سطح پر قائم ریکارڈ توڑ دیا ہے۔

اوکلاہوما شہر سے تعلق رکھنے والی بارہ برس کی کیٹی فرانسس کا کہنا ہے کہ اس کامیابی کا راز یہ ہے کہ وہ جس سے ملتیں اسے ایک ڈبہ خریدنے کی درخواست کرتیں۔

لیکن اس کامیابی کے بعد بھی وہ آرام سے نہیں بیٹھیں بلکہ انھوں نے 30 مارچ تک 20000 ڈبوں کی فروخت کا ہدف مقرر کر لیا ہے۔

سات ہفتوں کے اس ’کُکی سیزن‘ میں شدید سردی کے موسم کی وجہ سے ایک ہفتے کے لیے توسیع کر دی گئی ہے۔

اس سے قبل کا 18000 ڈبوں کی فروخت کا ریکارڈ سنہ 1980 میں قائم ہوا تھا۔

کیٹی گذشتہ برس گرلز سکاؤٹ کی بہترین رکن قرار پائی تھیں جب انھوں نے 12,428 ڈبے فروخت کیے تھے۔

مقامی ٹیلی وژن کوسو سے بات کرتے ہوئے چھٹی جماعت کی طالبہ کیٹی نے کہا ’بسکٹ بیچنے کے لیے تین باتیں ضروری ہیں، یہ کام بہت وقت مانگتا ہے، پابندی اور جو ملے اس سے بسکٹ خریدنے کو کہیں۔‘

ان کے گروہ کو امداد جمع کرنے والے گروہ کی جانب سے ایک مخصوص رقم ملی ہے اور وہ اسے چھاتی کے کینسر کی تحقیق کے لیے وقف کرنا چاہتے ہیں۔

یہ پہلی بار نہیں ہے کہ کوئی سکاؤٹ گرل خبروں کی زینت بنی ہے۔

گذشتہ ماہ ایک تیرہ برس کی لڑکی نے دانش مندانہ فیصلہ کرتے ہوئے ایک طبی مقاصد کے لیے استعمال ہونے والے گانجے کی ڈسپنسری کے باہر سٹال لگایا اور دو گھنٹے میں اس نے 117 بسکٹ کے ڈبے فروخت کر دیے۔

اسی بارے میں