کھربوں جعلی یوروز کا دھندہ

واٹیکن بینک تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اس بینک کو سرکاری طور پر میں مذہبی کاموں کا ادارہ سمجھا جاتا ہے

اطالوی پولیس نے ایسے دو لوگوں کو گرفتار کیا ہے جو واٹیکن بینک میں مبینہ طور پر کھربوں یوروز کے جعلی بانڈ جمع کرانے کی کوشش کر رہے تھے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ان دونوں نے یہ کہ کر بینک میں داخل ہونے کےلیے کہا کہ حکام کے ساتھ ملاقات کا وقت طے ہے تاہم انہیں پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔

حکام کے مطابق ان کے بیگ سے چار کھرب ڈالر کی مالیت کے جعلی بانڈز برآمد ہوئے۔ خیال ہے کہ یہ دونوں بینک میں قرضے کا سلسلہ شروع کرنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔

ان میں سے ایک کا تعلق امریکہ سے اور دوسرے کا ہالینڈ سے بتایا جاتا ہے۔

اس بینک کو سرکاری طور پر میں مذہبی کاموں کا ادارہ سمجھا جاتا ہے۔جس میں دنیا بھر کے پادریوں، بشپ اور مذہبی کاموں کے لیے اکاؤنٹس ہیں۔

پولیس نے خبر رساں ادارے اے پی کو بتایا کہ دونوں مشتبہ افراد کو رہا کر دیا گیا ہے، تاہم تحقیقات جاری ہے کیونکہ اطالوی قانون میں فراڈ کی تحقیقات کے لیے حراست میں رکھنے کی اجازت نہیں ہے۔

واٹیکن اپنے بینکنگ نظام کو مزید سخت بنانے کی کوشش کر رہے ہیں کیونکہ یوروپی واچ ڈاگ تنظیم نے نکتہ چینی کرتے ہوئے اِسے سرمایہ کی جنت کہا تھا۔

پوپ فرانسس نے بینک میں تبدیلیوں اور اس کے کاروبار میں مکمل شفافیت کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔

اسی بارے میں