ماؤنٹ ایورسٹ: برفانی تودہ گرنے سے 12 گائیڈ ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption چین اور نیپال دونوں کی علاقائی حدود میں پھیلی یہ دنیا کی بلند ترین چوٹی ہے جس کی اونچائی 8848 میٹر ہے

دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ پر برفانی تودہ گرنے سے کم سے کم 12 مقامی گائیڈ ہلاک ہو گئے ہیں۔

برفانی تودہ پاپ کارن فیلڈ کے نام سے مشہور علاقے میں مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے چھ بجے گرا۔

حکام کے مطابق یہ جگہ ماؤنٹ ایورسٹ کے بیس کیمپ سے قریب ہے اور اس کی بلندی 5800 میٹر ہے۔

ایک سرکاری اہل کار نے بی بی سی کو بتایا کہ کچھ گائیڈوں کو بچا لیا گیا ہے جب کہ دیگر کی تلاش کے لیے کاروائی جاری ہے۔

سیاحت کی وزرات کے اہل کار نے بی بی سی کو بتایا کہ امدادی کارروائی کے تحت مدد کے لیے تین ہیلی کاپٹر علاقے میں بھیجے گئے ہیں۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس نے حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ شرپا گائیڈز کے ارکان صبح اس علاقے میں کوہ پیماؤں کے لیے رسیاں لگانے گئے تھے کہ برفانی تودہ گر گیا۔

سنہ 1953 میں پہلی مرتبہ تسخیر کیے جانے بعد سے اب تک تین ہزار سے زائد لوگوں نے اسے سر کیا ہے اور اس دوران بہت سے کوہ پیما ہلاک ہو چکے ہیں۔

چین اور نیپال دونوں کی علاقائی حدود میں پھیلی یہ دنیا کی بلند ترین چوٹی ہے جس کی اونچائی 8848 میٹر یا 29029 فٹ ہے۔

اسی بارے میں