بوائے فرینڈ سے لےکر ڈرون تک برائے فروخت

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ٹی مال کے اعداد و شمار کے مطابق اس قسم کے 134 ڈرون فروخت کیے گئے ہیں جس میں 80 گذشتہ مہینے فروخت ہوئے

چینی ویب سائٹ تاؤ باؤ دنیا کی سب سے بڑی ای کامرس ویب سائٹوں میں سے ایک ہے جس میں نہ صرف ای بے اور ایمیزون دونوں کی خصوصیات ہیں، بلکہ یہ ان دونوں سے بڑی بھی ہے۔

تاؤباؤ کے 50 کروڑ رجسٹرڈ صارفین ایک منٹ کے اندر آپس میں تقریباً 50 ہزار مصنوعات کی تجارت کرتے ہیں۔

تاؤباؤ کے دو بڑے پلیٹ فارم ہیں، ٹی مال اور تاؤباؤ بازار۔ ٹی مال پر بڑے برانڈ کے مالکان صارفین کو براہِ راست مصنوعات فروخت کرتے ہیں جبکہ تاؤباؤ بازار میں چھوٹی کمپنیاں اور نئے تاجر اپنی اپنی دوکان سجاتے ہیں۔

11 نومبر سنہ 2013 کو جب تاؤباؤ نے سالانہ فروخت کے دن کا اہتمام کیا تو صرف چھ منٹ میں ایک ارب یوان کی تجارت ہوئی اور پورے دن میں تجارت کا حجم 35 ارب یوان یا 5.6 ارب امریکی ڈالر سے زیادہ تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption نئے چینی سال کا موقع بہت سے اکیلے مرد و خواتین کے لیےکافی پریشان کن بھی ہوتا ہے جب خاندان کے لوگ ذاتی نوعیت کے سوال کرتے ہیں

ویب سائٹ پر فروخت کے لیے پیش کی گئی فہرست میں 80 کروڑ سے زائد مصنوعات ہیں جہاں آپ کو کوئی بھی چیز مول لےسکتے ہیں۔

ویب سائٹ پر مندرجہ ذیل کچھ ایسی غیر روایتی اشیا بھی فروخت کےلیے دستیاب ہیں۔

ڈرون برائے فروخت

گذشتہ نومبر کو شامی باغیوں نے سرکاری فوج کے ایک ڈرون کو گرانے کا دعویٰ کیا تھا۔ جیسے ہی اس ڈرون کی تصاویر انٹرنیٹ پر سامنے آئیں تو جلد ہی اسے شانزین میں قائم چینی کمپنی کے ڈرون کے طور پر پہچان لیاگیا، جسے تاؤباؤ پر فروخت کیاگیا تھا۔

ڈی جے آئی فینٹم 2 ریموٹ کنٹرول ڈرون ہے جس میں کیمرا لگا ہوا ہے۔ شام میں گرنے والا یہ ڈرون ٹی مال پر 4999 یوان میں فروخت ہوا تھا۔

ٹی مال کے اعداد و شمار کے مطابق اس قسم کے کل 134 ڈرون فروخت کیےگئے ہیں جس میں 80 صرف گذشتہ مہینے میں فروخت ہوئے۔ یہ بتانا مشکل ہے کہ اس کی فروخت کو فروغ دینے میں شام کی کشیدگی کا کوئی کردار ہے یا نہیں۔

بوائے فرینڈ برائے فروخت

چین میں قمری سال کا آغاز مغربی ممالک میں کرسمس کی طرح خاندانوں کے میل ملاپ کا موقع ہوتا ہے۔ لیکن بہت سے اکیلے مرد و خواتین کے لیے یہ تہوار خاصا پریشان کن بھی ہوتا ہے جب خاندان کے لوگ ذاتی نوعیت کے سوال کرتے ہیں۔

نئے چینی سال سے پہلے تاؤباؤ پر جعلی بوائے فرینڈ بننے کی خدمات کے بارے میں ایک فہرست دی گئی تھی جس میں ایک تاجر نے واضح خدمات کی فہرست جاری کی تھی۔

نیا سال کا موقع گزرنے کی بعد اس قسم کی ساری فہرستیں غائب ہوگئیں اور اب یہ جاننا مشکل ہے کہ جن مردوں نے اپنی خدمات پیش کی تھیں انھیں کوئی کام ملا بھی تھا یا نہیں۔

زندہ بچھو

تاؤباؤ پر زندہ بچھو کی فروخت بہت مشہور ہے۔ ویب سائٹ پر 800 سے زیادہ کاروباری افراد افریقی شہنشاہ بچھو سے لے کر چینی مسلح دم والے بچھو کو فروخت کے لیے پیش کرتے ہیں۔

عام طور پر ایک برطانوی پاؤنڈ میں ایک درجن بچھو مل جاتے ہیں۔

ایک تاجر نے، جو تاؤباؤ پر بچھو فروخت کرنے والے سب بڑے تاجر ہونے کا دعویٰ کرتے ہیں، صارفین کو بحفاظت زندہ بچھو پہنچانے کی یقین دہانی کرانے کے لیے بچھو کے پیک کی تصاویر شائع کیں جس پر کھولنے کی ہدایت بھی درج تھیں۔

اگر کوئی صارف زندہ بچھو سے پھر بھی ڈرتا ہے تو اس کو فرائی یا ابالے ہوئے بچھو کی پیشکش بھی کی گئی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اگر کوئی صارف زندہ بچھو سے پھر بھی ڈرتا ہے تو اس کو فرائی یا ابالے ہوئے بچھو کی پیشکش بھی کی گئی ہے

چھاتی کے دودھ کا صابن

تاؤباؤ پر ایک مشہور چیز وہ صابن ہیں جس کے بارے میں نئی ماں بننے والی خواتین دعویٰ کرتی ہیں کہ وہ اسے اپنی چھاتی کی دودھ سے بناتی ہیں۔

ایک تاجر خاتون نے اس بات کی وضاحت کی ہے کہ وہ کس طرح اپنے دودھ سے صابن بناتی ہیں کیونکہ ان کا بیٹا ان کا پورا دودھ نہیں پی سکتا۔

وہ کہتی ہیں کہ ’میں اسے گرا دیتی تھی لیکن یہ بڑا ضیاع لگتا ہے۔‘

انھوں نے ایک تصویر پوسٹ کی ہے جس میں اس نے اپنے شیر خوار بچے اور دل اور پھولوں والی شکل میں بنے صابن کی تصاویر ایک ساتھ پکڑا ہوا ہے۔

خاتون کا کہنا ہے کہ یہ صابن نرم ہیں جسے بالغ افراد اور بچے یکساں طور پر استعمال کر سکتے ہیں۔ انھوں نے دعویٰ کیا کہ یہ صابن بالغ افراد کی جلد کی صفائی اور بچوں کی نیپی کی خارش کے لیے موثر ہے۔

روح کے لیے شاعری

’50 سینٹ کے شاعری کی اداسی‘ نامی دکان میں نظموں کے لیے کوئی چیز فروخت نہیں ہو رہی۔ یہاں چار شاعروں کی 45 نظمیں فروخت کے لیے پیش کی گئی ہیں۔

ان کا پیغام بہت واضح ہے: ’ہمارے زمانے میں شاعر بھوکے رہ رہے ہیں۔ ہماری شاعری بغیر معاوضے کے دستیاب ہے۔اگر آپ سمجھتے ہیں کہ اچھی شاعری ہے تو ہم آپ کی طرف سے 50 سینٹ کے چندے پر مایوس نہیں ہوں گے۔‘

تاؤباؤ کے اعداد وشمار کے مطابق یہ دکان گذشتہ اگست کو بنائی گئی تھی اور اسے صرف دو دفعہ چندہ ملا ہے۔

سبزی اور لوفا پانی

32 سالہ وانگ زیافنگ کو تاؤباؤ کے سینکڑوں صارفین جانتے ہیں۔ وانگ اپنی دکان میں اپنے فارم سے لائے گئے 20 قسم کی اشیا فروخت کرتے ہیں۔

شنگھائی میں اپنی نوکری چھوڑنے کے بعد وانگ نے تین سال میں تاؤباؤ پر اپنے بہترین برانڈ متعارف کرائے ہیں۔

وانگ اب لوٹس کے بیج سے لے کر گھر میں بنائے گئے ساسیج (قیمہ بھری آنت) تک فروخت کرتے ہیں۔ ان کی سب سے زیادہ فروخت ہونے والی اشیا میں لوفا پانی اور ابلے چاول شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption چینی صدر نے سور کے گوشت اور پیاز کے بن کا آرڈر دیا تھا

تاؤ مت کے مذہبی نشانات

ہزاروں سال سے تاؤ مت مذہب اور اس کا فلسفہ چینی طرزِ زندگی میں گھل مل گیا ہے۔

تاؤباؤ پر تاؤمت کے مذہبی پیشوا درجنوں دکانوں میں ’فو‘ یا تاؤ مت کے مذہبی نشانات فروخت کرتے ہیں، جن بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ خریدنے والے کے لیے خوش قسمتی کا باعث ہو سکتے ہیں۔

سب سے زیادہ مشہور فو وہ ہے جو روتے بچے کو سکون دیتا ہے۔ مختلف فو کی مختلف قیمتیں ہوتی جو ایک یوان سے لے کر 166000 یوان تک ہو سکتی ہیں۔

صدر کا کمبو لنچ

جب گذشتہ دسمبر کو چین کے صدر شی جن پنگ بیجنگ کے وسط میں کوینگ فنگ سٹیم ڈمپلنگ ریستوران میں لنچ کے لیے روکے تو ان کو معلوم نہیں تھا کہ ان کی پسند کی خوراک اس ریستوران کا سب سے زیادہ فروخت ہونے والی خوراک بن جائے گا۔

انھوں نے سور کے گوشت پیاز کے بن کا آرڈر دیا تھا۔ اب سے ’صدارتی کمبو‘ کہا جاتا ہے۔ اب یہ خوراک تاؤباؤ پر بھی دستیاب ہے جس کی قیمت 70 یوان ہے۔

گیم کے لیے قرضہ

چین میں آن لائن گیمنگ بہت بڑا کاروبار ہے۔ سنہ 2012 میں چین میں 19 کروڑ آئن لائن گیم کھیلنے والے تھے اور اس سال اس صنعت کی کل مالیت 69 ارب یوان تک پہنچ گئی تھی۔

ان گیموں کا تاؤباؤ پر بہت بڑا کاروبار ہوتا ہے جہاں کھلاڑی گیم چلانے والوں سے ورچوئل قرضہ لے سکتے ہیں یا ایسے کھلاڑیوں کو ورچوئل سامان کے لیے رقم ادا کر سکتے ہیں جو صرف گیم میں موجود ہوتے ہیں۔

ویب سائٹ پر یہ خدمات دینے والی درجنوں دکانیں ہیں۔ ان دکانوں میں اکثر سارا دن گیم کھیلنے والے کام کرتے ہیں۔

اسی بارے میں