یوکرین:جھڑپ میں چار فوجی ہلاک، ہیلی کاپٹر تباہ

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption یوکرین کی فوج نے اتوار کو شہر جانے والی شاہراہ کو منقطع کر دیا تھا

یوکرین میں حکام کا کہنا ہے کہ ملک کے مشرقی شہر سلوویانسک کے قریب روس نواز علیحدگی پسندوں سے جھڑپ میں چار یوکرینی فوجی ہلاک اور ایک ہیلی کاپٹر تباہ ہوگیا ہے۔

حکام کے مطابق جھڑپ میں یوکرینی فوجی یونٹ پر بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا گیا اور جوابی کارروائی میں باغی بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

اس سے قبل ملنے والی اطلاعات کے مطابق علیحدگی پسندوں نے یوکرین کی افواج کی جانب سے کیے جانے والے حملوں کے دوران مشرقی شہر سلوویانسک سے پسپائی اختیار کرنی شروع کر دی ہے۔

روس کی خبر رساں ایجنسی انٹر فیکس کے مطابق یوکرین کی افواج نے سلوویانسک کے گرد و نواح میں ایک ٹی وی ٹاور پر قبضہ کر لیا ہے اور باغیوں کو شہر سے باہر دھکیلا جا رہا ہے۔

خبر رساں ایجنسی روئٹرز کے ایک نامہ نگار کے مطابق حالیہ دنوں میں سلوویانسک سے بھاری گولہ باری کی آوازیں سنی جا سکتی ہیں۔

ادھر یوکرین کے وزیرِ داخلہ کا کہنا ہے کہ روس نواز علیحدگی پسندوں کے ساتھ لڑائی کے دوران متعدد فوجی ہلاک ہو چکے ہیں۔

آرسین آراکوو نے ہلاک ہونے والے سپاہیوں کی تعداد کے بارے میں تو کچھ نہیں بتایا، تاہم ان کا کہنا تھا کہ ایک جھڑپ میں آٹھ فوجی زخمی ہو گئے ہیں۔

خبر رساں ایجنسی روئٹرز کے مطابق یوکرین کے شہر سلوویانسک کے قریب چار ایمبولینسیں دیکھی گئیں جب کہ علیحدگی پسندوں کی کم سے کم دو بکتربند گاڑیاں اور متعدد باغیوں کو پسپا ہوتے ہوئے دیکھا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption یوکرین کے وزیرِ داخلہ کا کہنا ہے کہ روس نواز علیحدگی پسندوں کے ساتھ لڑائی کے دوران متعدد فوجی ہلاک ہو چکے ہیں

اس سے پہلے شہر میں موجود ذرائع نے کہا تھا کہ کہ یوکرین کی فوج کی جانب سے روس نواز علیحدگی پسندوں کے گڑھ پر حملے کا اندیشہ بڑھتا جا رہا ہے۔

یوکرین کی فوج نے اتوار کو شہر جانے والی شاہراہ کو منقطع کر دیا تھا۔ یہ قدم باغیوں کی جانب سے شہر کے نواحی علاقے میں یوکرین کے دو ہیلی کاپٹروں کو مار گرانے کے بعد اٹھایا گیا۔

کیئف کی حکومت کے مطابق یوکرین کی فوج ’دہشت گردی مخالف آپریشن کر رہی ہے تاکہ وہ مشرقی شہروں میں سرکاری عمارتوں کو روس نواز علیحدگی پسندوں سے واپس حاصل کر سکے۔‘

ادھر یوکرین کے وزیرِاعظم آرسینی یاتسینیوک نے جنوبی شہر اوڈیسا میں تشدد کے دوران ہونے والے ہونے والی ہلاکتوں کا الزام روس پر عائد کرتے ہوئے کہا کہ روس یوکرین کو تباہ کرنا چاہتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ روس کا مقصد یوکرین میں جنوبی شہر اوڈیسا جیسے حالات پیدا کرنا ہے تاہم اس علاقے کا کنٹرول ابھی تک کیئف کے پاس ہے۔

خیال رہے کہ جمعے کو یوکرین کے شہر اوڈیسا میں پرتشدد کارروائیوں کے دوران ایک سرکاری عمارت میں آگ لگ جانے کے باعث کم از کم 31 افراد ہلاک ہوئے گئے تھے۔

یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب روس نواز مظاہرین اور پولیس کے درمیان جھڑپیں ہو رہی تھیں۔

ادھر روس نے خبردار کیا ہے کہ یوکرین میں بڑھتی ہوئی بدامنی پر قابو نہ پانے کی صورت میں یورپ کا امن متاثر ہو سکتا ہے۔

ماسکو نے یوکرین اور بین الاقوامی برادری سے کہا ہے کہ وہ یوکرین میں جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور نسلی تعصب کو ختم کرنے کے لیے مشترکہ کوششیں کریں۔

اسی بارے میں