یورپی یونین کے ایجنڈے پر نظرثانی کرنے پر اتفاق

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ہرمین رام پیوئے نے کہا کہ یورپ میں ہونے والے انتخابات کے نتائج نے یورپی یونین کو ’قائم رکھنے اور اس میں تبدیلی لانے‘ کا پیغام دیا ہے

یورپین کونسل کے صدر ہرمین وان رام پیوئے نے کہا ہے کہ یورپ میں حالیہ انتخابات کے بعد یورپی رہنماؤں نے یورپی یونین کے ایجنڈے پر نظر ثانی کرنے پر اتفاق کر لیا ہے۔

ہرمین رام پیوئے نے کہا کہ یورپی یونین کے 28 ممبر اراکین نے انھیں مستقبل کے پالیسیوں پر صلاح و مشورے شروع کرنے کا کہا ہے۔

انھوں نے یہ بات یورپ میں حالیہ انتخابات میں دائیں بازوں کی جماعتوں کی بڑی کامیابیوں سے متعلق برسلز میں ہونے والے اجلاس کے بعد کہی۔

یورپین پارلیمان کے لیے ہونے والے انتخابات میں جن رہنماؤں کو شکست ہوئی انھوں نے یورپی یونین کے مستقبل پر سوچنے کا کہا ہے۔

بی بی سی کے ایک نامہ نگار کا کہنا ہے کہ ممکنہ اصلاحات میں ریگولیشن یا نگرانی اور کفایت شعاری پر توجہ کم کرنا شامل ہو سکتا ہے جبکہ ووٹروں کی مایوسی کو ختم کرنے کے لیے معیشت کو ترقی دینے اور روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے اقدامات ہو سکتے ہیں۔

ہرمین رام پیوئے نے کہا کہ یورپ میں ہونے والے انتخابات کے نتائج نے یورپی یونین کو ’قائم رکھنے اور اس میں تبدیلی لانے‘ کا پیغام دیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ یورپی یونین کے رہنماؤں کے اجلاس میں ووٹروں کی طرف سے یورپ حالیہ انتخابات میں یورپ مخالف پیغام گفتگو کا محور رہا۔

ان کا کہنا تھا کہ برسلز میں اجلاس کے دوران ’پہلی سود مند بحث ہوئی‘ اور ای یو کے رہنماؤں نے معیشت کو مرکزی حیثیت دینے پر اتفاق کیا ہے۔

یورپین کونسل کے صدر نے کہا کہ’جیسا کہ یورپی یونین معاشی بدحالی سے نکل رہا ہے، اسے معاشی ترقی کے مثبت ایجنڈے کو اپنانے کی ضرورت ہے۔ تاکہ ای یو مخالف جذبات پر قابو پایا جا سکے۔‘

اس سے پہلے فرانس کے صدر فرنسواں اولاند نے یورپی رہنماؤں کو کہا کہ وہ فرانس میں ہونے والے واقعات پر ’غور کریں۔‘ انھوں نے حالیہ انتخابات میں اپنی سوشلٹ جماعت کی شکست کو تکلیف دہ قرار دیا۔

اسی بارے میں