عالمی فضائی صنعت کے منافعے میں کمی کا خدشہ

تصویر کے کاپی رائٹ RIA Novosti
Image caption آئی اے ٹی اے 240 بین الاقوامی ہوائی ایئر لائنز کی نمائندہ تنظیم ہے جو ایئر ٹریفک کا 84 فیصد حصہ کور کرتی ہے

انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن یعنی ایاٹا کا کہنا ہے کہ چین کی معاشی ترقی کی رفتار میں کمی کے خدشات کے سبب اس کے منافعے میں کمی واقع ہونے کے خدشات پیدا ہو گئے ہیں۔

ایاٹا نے پیش گوئی کی ہے کہ وہ سنہ 2014 میں 18 ارب ڈالر کا منافع کمائے گی، تاہم رواں برس مارچ میں اس کا منافع 18.7 ارب ڈالر سے کم رہا۔

ایاٹا نے اس کی وجہ چین کی اقتصادی ترقی کی رفتار میں کمی قرار دی۔

ایاٹا کے ڈائریکٹر جنرل ٹونی ٹیلر کا کہنا ہے کہ فضائی صنعت کو مخالف ہواؤں کا سامنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ رواں برس ہوابازی کی صنعت کو بنیادی ڈھانچے پر آنے والے خرچ، ایئر ٹریفک مینیجمنٹ کی نااہلی اور ٹیکسوں کے بھاری بوجھ کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے۔

انھوں نے کہا کہ آئی اے ٹی اے نے پیش گوئی کی ہے کہ سنہ 2014 میں ہوائی صنعت کی آمدنی 746 ارب ڈالر تک پہنچ جائے گی۔

ٹونی ٹیلر نے مزید کہا کہ بےرحم معاشی حقیقت یہ ہے کہ ہم صرف 2.4 فیصد کی اوسط سے منافع کمائیں گے، جس کا مطلب یہ ہے کہ ہم ہر مسافر سے چھ ڈالر سے بھی کم منافع حاصل کریں گے۔

آئی اے ٹی اے 240 بین الاقوامی ہوائی ایئر لائنز کی نمائندہ تنظیم ہے جو ایئر ٹریفک کا 84 فیصد حصہ کور کرتی ہے۔

اسی بارے میں