یورپی سکیورٹی کے لیے ایک ارب ڈالر کا امریکی منصوبہ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption امریکی صدر کی جانب سے کیے گئے اعلان کو کانگریس کی منظوری کی ضرورت ہو گی

امریکی صدر براک اوباما نے یورپ میں امریکی فوجیوں کی تعیناتی میں اضافے کے لیے ایک ارب ڈالر دینے کا اعلان کیا ہے۔

یہ اعلان انھوں نے منگل کو پولینڈ کے دورے کے دوران کیا۔ اس موقع پر براک اوباما نے کہا کہ امریکی کے یورپی اتحادیوں کی سکیورٹی ’مقدس‘ ہے۔

انھوں نے کہا کہ امریکہ اپنے یورپی اتحادیوں کی سکیورٹی کے لیے پر عزم ہے۔ امریکی صدر کے مطابق یوکرین کے بحران کے بعد ہم نے وہاں امریکی فوجیوں کی تعداد میں اضافہ کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا: ’ہم نے نیٹو کے فضائی مشنز میں ہاتھ بٹانے کے لیے اور اپنی افواج کی مدد کے لیے پولینڈ میں اضافی زمینی افواج اور ایف 16 جہازوں کو روٹیٹ کرنا شروع کر دیا ہے۔‘

واضح رہے کہ امریکی صدر کی جانب سے کیے گئے اعلان کو کانگریس کی منظوری کی ضرورت ہو گی۔

امریکی صدر یورپ کے دورے میں نیٹو رہنماؤں کے ساتھ یوکرین میں جاری بحران پر بات چیت کریں گے۔

براک اوباما یورپ کے دورے کے دوران بیلجیئم اور فرانس کا بھی دورہ کریں گے۔

منگل کو پولینڈ آمد کے بعد امریکی صدر نے امریکی اور پولش فضائی اہل کاروں کے ساتھ ملاقات کی۔

خیال رہے کہ رواں برس اپریل میں ماسکو کے ساتھ بڑھتے ہوئے تناؤ کے بعد 150 امریکی فوجیوں کو فوجی مشقوں کے لیے پولینڈ بھیجا گیا تھا۔

دوسری جانب وائٹ ہاؤس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ تجویز ایک ایسے وقت سامنے آئی ہے جب یورپ کو سکیورٹی کے نئے چیلنجوں کا سامنا ہے۔

وارسا میں موجود بی بی سی کے نامہ نگار ایڈم ایسٹن کا کہنا ہے کہ امریکی صدر ایشیائی اقوام کے ساتھ تعلقات کو اہمیت دیتے ہیں جس کی وجہ سے بعض مشرقی یورپی رہنما یہ محسوس کرتے ہیں کہ انھیں حالیہ برسوں میں نظر انداز کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں