تھائی لینڈ کے باسیوں کے چہروں پر خوشیاں لوٹانے کی کوشش

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption تھائی لینڈ کے فوجی حکمرانوں نے ہم وطنوں کو خوش کرنے کے لیے ایک منصوبے کا اعلان کیا ہے

تھائی لینڈ کے فوجی حکمرانوں نے احتجاج کے ستائے ہوئے ہم وطنوں کے چہروں پر پھر سے خوشیاں لانے کے لیے ملک بھر میں فوجی بینڈ کے کنسرٹ کرانے کا پروگرام شروع کیا ہے جہاں شرکا کے لیے مفت حجامت کی سہولت اور میٹھے کا بندوبست بھی کیا جاتا ہے۔

تھائی لینڈ کے فوجی حکمرانوں نےگذشتہ ماہ جمہوری حکومت کا تختہ الٹ کر اقتدار پر قبضہ جما لیا تھا۔ تھائی لینڈ میں جمہوری حکومتوں کے دوران بڑے پیمانے احتجاج کیا جاتا رہا ہے۔

تھائی لینڈ میں فوج کا اقتدار پر قبضہ

ایک سال تک انتخابات نہیں ہوں گے: تھائی فوجی حکمران

تھائی لینڈ کے اخبار سموئی ٹائمز کے مطابق فوجی حکمرانوں نے ہم وطنوں کے چہروں پر دوبارہ خوشیاں لانے کے لیے فوجی بینڈ کے کنسرٹ کا پروگرام شروع کیا ہے۔

اخبار کے مطابق فوجی حکمرانوں نے لوگوں کا اعتماد حاصل کرنے کے لیے گھڑ سوار فوجی دستوں کو شہر کی سڑکوں سے کوڑا کرکٹ اٹھانے کا فرض سونپا ہے۔ تھائی فوجی اس جگہ بھی صفائی کرتے ہوئے بھی نظر آئے جہاں گذشتہ ہفتے فوجی حکمرانوں کے خلاف احتجاج کیاگیا تھا۔

تھائی لینڈ کے فوجی سربراہ جنرل پرایوتھ چان اوچا کا کہنا ہے کہ تھائی لینڈ کے شہری پچھلے نو سالوں سے بہت پریشان تھے اور فوج کی طرف سے سیاسی تبدیلیاں لانے کا مقصد ہم وطنوں کو خوشیاں فراہم کرنا ہے۔

فوجی سربراہ نے 22 مئی کو قوم سے خطاب سے دوران کہا: ’تھائی لینڈ کے لوگ مجھے پسند کرتے ہیں۔ وہ پچھلے نو برسوں سے خوش نہیں تھے۔ اب ملک میں خوشی لوٹ آئی ہے۔‘

فوجی حکومت کے ترجمان جنرل ونتھائی سواری نے اعلان کیا ہے کہ جمعے کو ہفتہ وار ٹی وی پروگرام شروع کیا جا رہا ہے جس میں لوگوں کے سوالوں کے جواب دیے جائیں گے۔

فوجی ترجمان نے سیاسی مخالفین کی گرفتاریوں کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب کچھ ملک میں خوشیاں واپس لانے کی کوششوں کا حصہ ہے۔

اسی بارے میں