اسرائیل: روون رولِن نئے صدر منتخب

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption 74 سالہ رولِن فلسطینی ریاست کے مخالف ہیں اور مغربی کنارے میں یہودی بستیوں کے حامی ہیں

اسرائیل کی پارلیمان نے سابق پارلیمانی سپیکر اور وزیر روون ریولِن کو ملک کا نیا صدر منتخب کیا ہے۔

صدارتی انتخاب میں انھوں نے تجربہ کار رکن میر شیترت کو دس ووٹوں سے شکست دی۔

خفیہ رائے شماری میں ریولن کو 63 ووٹ ملے جبکہ سیترت 53 ووٹ حاصل کر سکے۔

وہ جولائی میں صدر کا عہدہ سنبھالیں گے جب سات سال کی مدت پوری ہونے پر 90 سالہ شمعون پیریز ملک کی صدارت سے الگ ہوں گے۔

اسرائیل میں صدر کا عہدہ رسمی عہدہ ہے اور فلسطین کے ساتھ مذاکرات میں ان کا کوئی کردار نہیں ہوتا۔

ریولِن اسرائیلی وزیراعظم بن یامن نتن یاہو کی جماعت لیکود سے تعلق رکھتے ہیں اور وہ ملک کے دسویں صدر ہوں گے۔

74 سالہ رولِن فلسطینی ریاست کے مخالف ہیں اور مغربی کنارے میں یہودی بستیوں کے حامی ہیں۔

ریولن کو مبارکباد دیتے ہوئے وزیر اعظم نتن یاہو نے کہا کہ ’میں جانتا ہوں کہ بطور صدر آپ قوم کو متحد رکھنے اور بیرونی چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے لیے اتحاد کا مظاہرہ کرنے کا دوہرا مشن پورا کرنے کے لیے ہر ممکن کوشش کریں گے۔‘

اسی بارے میں