دس چیزیں جن سے ہم لاعلم تھے

Image caption چند مکڑیاں مچھلیاں بھی کھاتی ہیں

1۔برطانیہ میں اگر ہر مرد، عورت اور بچے کو ایک الو دیا جائے تو اس پر 12.6 بلین پاؤنڈز لاگت آئے گی جبکہ اگر ان کو چڑیا خانہ دیا جائے تو اس پر 69.3 بلین پاؤنڈ لاگت آئے گی۔

مزید جاننے کے لیے (ڈیلی مرر)

2۔ افریقہ کے ملک بورنڈی میں ایک گروپ میں جاگنگ یعنی آہستہ آہستہ دوڑنا جرم ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

3۔سلاد کو اگر کنڈنسکی کی پینٹنگ کی مانند سجانے سے اس کو ذائقہ بہتر ہو جاتا ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

4۔ امریکی گلوکارہ اور اداکارہ کورٹنی لّو جولیئن فیلوز کا ناول ’سنوب‘ ہر سال پڑھتی ہیں۔

مزید جاننے کے لیے (ایوننگ سٹینڈرڈ)

5۔ کیکڑے کے کام نہیں ہوتے لیکن اس کے باوجود وہ سن سکتا ہے۔

مزید جاننے کے لیے (ٹائمز)

6۔ لندن شہر، آئلز آف سلی اور سکوکہوم آئی لینڈ کے علاوہ پورے انگلینڈ اینڈ ویلز کو ’خرگوشوں سے پاک علاقہ‘ قرار دیا گیا ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

7۔سنہ 1930 سے شروع ہوئے فٹ بال ورلڈ کپ میں عام طور پر گول میچ کے 18 ویں اور 75 ویں منٹ میں ہوتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے (اکانومسٹ)

8۔ شاہی خاندان کا کوئی فرد جب ایڈمرل کی یونیفارم پہنتا ہے تو یونیفارم پر سنہری تہہ زیادہ چوڑی ہوتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

9۔ چند مکڑیاں مچھلیاں بھی کھاتی ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

10۔ آئس لینڈ کی آدھی سے زیادہ آبادی دکھائی نہ دینے والے افراد پر یقین رکھتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

اسی بارے میں