جاپان: نئی ریل سروس میں مسافروں کے لیے ٹب

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ریل کمپنی کا کہنا ہے کہ اس سروس پر تقریباً پانچ کروڑ ڈالر لاگت آئے گی

اطلاعات کے مطابق جاپان کی ایک نئی ریل سروس کے مسافروں کو سفر کے دوران اپنے پاؤں ٹب میں رکھ کر بیٹھنے کی سہولت میسر ہو گی۔

جاپان کی مشرقی ریل کمپنی شنجو اور فوکوشیما شہروں کے درمیان نئی شنکانسین نامی بُلٹ ٹرین چلائے گی۔

آساہی شمبون اخبار کے مطابق اس نئی سروس کی خاص بات پرتعیش سہولیات کے علاوہ مسافروں کو سفر کے دوران اپنے پاؤں ٹب میں رکھ کر بیٹھنے کی سہولت ہو گی۔

اخبار دی جاپان ٹائمز کا کہنا ہے کہ دو گھنٹے کے سفر کے دوران مسافر اپنے پاؤں ٹب میں رکھ کر بیٹھ سکتے ہیں، اس کے بعد وہ لاؤنج کار میں جا کر مقامی شراب ’ساکے‘ سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں

ریل کمپنی کا کہنا ہے کہ اس سروس پر 50 کروڑ ین (تقریباً پانچ کروڑ ڈالر) لاگت آئے گی۔

ایک اہلکار کا کہنا ہے کہ اس ریل سروس کے ڈیزائنروں کو پانی کے غیرضروری ضیاع سے بچنے کے لیے اقدامات کرنے چاہییں۔

ہیدے یوکی تیروئی نے آساہی شمبون اخبار کو بتایا کہ ہمیں ٹبوں کے درمیان کشن لگانے ہوں گے تاکہ گرم پانی باہر نہ گر سکے۔

جاپان کی 50 سال پرانی شنکانسین ٹرین 2,400 کلو میٹر کا فاصلہ 320 کلومیٹر فی گھنٹہ کے حساب سے طے کرتی ہیں۔

اسی بارے میں