امریکہ: 19ویں صدی کے شہریوں کو فوجی بھرتی کے نوٹس

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption مارتھا ویور کو بھی ایک نوٹس ملا جس میں ان کے مرحوم والد سے فوج میں ریجسٹریشن کرانے کے لیے کہا گيا تھا

امریکہ میں فوجی ڈرافٹ کے ذمہ دار ادارے نے سنہ 1800 کے آخر میں پیدا ہونے والے ہزاروں افراد کو بھرتی کا نوٹس روانہ کرنے پر معافی مانگی ہے۔

امریکہ کے اس ادارے سلیکٹیو سروس سسٹم (ایس ایس ایس) نے کہا ہے کہ یہ غلطی اس لیے رونما ہوئی کیونکہ نئے اہل نوجوانوں کی تلاش کے وقت صدی کو منتخب کرنے میں غلطی ہو گئی۔

ایس ایس ایس نے اس غلطی کا پتہ چلنے سے قبل سنہ 1893 سے 1897 کے درمیان پیدا ہونے والے 14250 افراد کو فوج میں لازمی بھرتی کا نوٹس روانہ کر دیا۔ اس کے علاوہ انھوں نے سنہ 1993 سے 1997 کے درمیان پیدا ہونے والے افراد کو بھی نوٹس بھیجا۔

سنہ 1893 سے 1897 کے درمیان پیدا ہونے والے جن افراد کو جبری بھرتی کا نوٹس بھیجا گیا ان میں سے تقریباً سب کے سب مر چکے ہوں گے اور اگر کوئی سب سے جوان زندہ بھی ہوگا تو وہ 117 سال کا ہوچکا ہوگا۔

قانون کے مطابق امریکہ کے مرد شہریوں کو اپنی 18 ویں سالگرہ سے قبل اس سسٹم میں لازمی طور پر ریجسٹریشن کرانا ہوتا ہے جبکہ 18 سے 25 کے تمام مرد تارکین وطن کو بھی اس میں ریجسٹریشن کرانا ہوتا ہے۔ لیکن یہ فوجی بھرتی کا قانون ویتنام کی جنگ کے بعد سے قابل عمل نہیں ہے اور اب امریکی فوج میں شمولیت پوری طرح سے رضاکارانہ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption امریکہ میں اب ڈرافٹ یعنی جبری فوجی بھرتی قابل عمل نہیں ہے اور یہ پوری طرح لوگوں کی اپنی رضا پر منحصر ہے

پنسلوانیا میں کنگسٹن کے 73 سالہ چک ہوئے نے کہا کہ انھیں ان کے مرحوم دادا برٹ ہوئے کے لیے نوٹس ملا۔ وہ پہلی جنگ عظیم میں لڑ چکے تھے۔ وہ سنہ 1894 میں پیدا ہوئے تھے اور 100 سال کی عمر میں سنہ 1995 میں ان کا انتقال ہوا۔

مسٹر ہوئے نے خبررساں ادارے اے پی سے کہا: ’میں نے کہا، خدایا یہ کس لیے ہے۔ اس میں لکھا ہوا ہے کہ اگر انھوں نے ڈرافٹ بورڈ کے لیے رجسٹریشن نہیں کرایا تو انھیں سخت جرمانہ لگےگا اور قید ہوگي۔ ہم پوری طرح بدحواس ہو گئے۔‘

ایس ایس ایس نے ایک بیان میں کہا کہ ’اس سے ان لوگوں کے اہل خانہ کو جو پریشانی ہوئی ہے ان پر انھیں دکھ ہے اور یہ یقین دہانی کراتی ہے کہ غلطی کو درست کر لیا گيا ہے اور اب ان لوگوں کو اس کے متعلق کوئی قدم نہیں اٹھانا ہوگا۔‘

ایجنسی کے ترجمان پیٹ شوبیک نے کہا کہ انھیں اس غلطی کا اس لیے علم نہیں ہو سکا کیونکہ پنسلوانیا میں سال کے لیے دو ہندسوں کا کوڈ استعمال ہوتا ہے جس کا مطلب یہ ہوا کہ 1893 اور 1993 میں دونوں سال پیدا ہونے والوں کا کوڈ ایک ہی ہوگا۔

پنسلوانیا کے ٹرانسپورٹ کی ترجمان جین میکنائٹ نے کہا کہ لائسنس کا نظم و نسق دیکھنے والے شعبے کے ایک کلرک نے جب ایس ایس ایس کو معلومات منتقل کی تو وہ صرف 20ویں صدی منتخب کرنا بھول گئے۔

اسی بارے میں