روسی سرحد کے قریب یوکرینی طیارہ تباہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption نیٹو کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ انھوں نے سرحد کے قریب روسی فوجیوں کی تعداد میں اضافہ دیکھا ہے

یوکرین کے حکام کا کہنا ہے کہ ملک کے مشرقی حصے میں روسی سرحد کے قریب اس کے ایک مال بردار فوجی جہاز کو مار گرایا گیا ہے۔

اس علاقے میں یوکرین کی فوج اور روس نواز علیحدگی پسندوں کے درمیان لڑائی جاری ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ اے این -26 طیارے کو ساڑھے چھ ہزار فٹ کی اونچائی پر اڑتے ہوئے نشانہ بنایا گیا۔

طیارے کو ’ایک طاقتور میزائل‘ کے ذریعہ نشانہ بنایا گیا جو ’ممکنہ طور پر روس سے داغا گیا تھا‘۔ اطلاعات کے مطابق عملے کے ارکان کو بچا لیا گیا ہے۔

روس کی طرف سے اس بارے میں کچھ نہیں کہا گیا ہے۔

دوسری طرف نیٹو نے کہا ہے کہ یوکرین کی سرحد کے قریب روسی فوجیوں کی تعداد بڑھ رہی ہے۔

نیٹو کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ انھوں نے سرحد کے قریب روسی فوجیوں کی تعداد میں اضافہ دیکھا ہے۔

انھوں نے کہا کہ اس طرح وہاں تعینات فوجیوں کی تعداد 12 ہزار تک ہو گئی ہے۔ روس اس بات سے انکار کرتا ہے کہ وہ یوکرین کے علیحدگی پسندوں کی حمایت کرتا ہے یا انھیں ہتھیار مہیا کرتا ہے۔

روس نے یورپی سلامتی اور تعاون کی تنظیم کے حکام کو یوکرین سے لگنے والی اپنی سرحد کی نگرانی کرنے کے لیے مدعو کیا ہے۔

یوکرین کے صدر پیٹرو پوروشینكو کی ویب سائٹ پر جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اے این -26 طیارے اس علاقے میں دہشت گرد مخالف مہم میں حصہ لے رہا تھا۔

اسی بارے میں