برطانوی وزیر خارجہ ولیم ہیگ عہدے سے مستعفی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون اپنی کابینہ میں بڑی تبدیلی کر رہے ہیں

برطانوی وزیر خارجہ ولیم ہیگ نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔

برطانوی وزیر اعظم کے دفتر کے مطابق اب وہ ایوان زیریں یعنی ہاؤس آف کامنز کے لیڈر کے طور پر کابینہ میں شامل رہیں گے۔

وہ اگلے سال ہونے والے عام انتخابات میں بھی حصہ نہیں لیں گے۔

برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون اپنی کابینہ میں بڑی تبدیلی کر رہے ہیں۔ ولیم ہیگ کا استعفی اسی تبدیلی کی کڑی ہے۔

کچھ سینئر وزراء نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ موجودہ وزیر دفاع فلپ ہیمڈ ہیگ کی جگہ لے سکتے ہیں۔

اسی تبدیلی کے تحت کنزرویٹو پارٹی کے کافی سینئر لیڈر کین کلارک بھی عہدہ چھوڑ رہے ہیں۔ کلارک 1970 میں ایم پی بنے تھے اور کابینہ میں بغیر کسی عہدے کے وزیر تھے۔

ویسے سابق وزرائے اعظم مارگریٹ تھیچر اور جان میجر کے دور میں ان کے پاس اہم وزارتیں تھیں۔ان میں وزارت داخلہ اور وزارت خزانہ جیسے اہم محکمے شامل تھے۔

کہا جا رہا ہے کہ اس تبدیلی میں وزیر اعظم کیمرون مزید خواتین کو کابینہ میں جگہ دیں گے۔ کئی اور وزیر بھی کابینہ سے استعفی دے رہے ہیں مگر ان کی جگہ نئے چہروں کا اعلان ابھی نہیں ہوا ہے۔

اسی بارے میں